The news is by your side.

Advertisement

گیس صارفین کو اضافی ڈھائی ارب روپے واپس کیے جائیں گے، فواد چوہدری

اسلام آباد : وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے کہا ہے کہ گیس بل میں اضافے سے متعلق تحقیقات جاری ہیں، صارفین کو اضافی ڈھائی ارب روپے واپس کیے جائیں گے۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے وزیر اعظم عمران خان کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کے اجلاس کے بعد میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے کیا، اجلاس کی تفصیلات بیان کرتے ہوئے فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ کابینہ اجلاس کے آغاز میں نیوزی لینڈ کے شہدا کیلئے فاتحہ کی گئی، کابینہ نے نیوزی لینڈ میں دہشت گردی کی شدید مذمت کی ہے۔

ایک سازش کے تحت مسلمانوں کے خلاف نفرت پھیلائی گئی، تمام مذاہب کے لوگوں کو ایک دوسرےکے نقطہ نظر کو سمجھناچاہیے، ہمیں سول لائزیشن میں ڈائیلاگ کی ضرور ہے۔

گیس چوری میں بڑے لوگوں کا نام بھی آئے گا یہ پورا نیٹ ورک ہے، بڑی کمپنیوں کو گیس کنکشن دینے سے عوام کو نقصان پہنچ رہا ہے

وزیر اطلاعات نے بتایا کہ کابینہ نے لائیو اسٹاک کے شعبے کو ترقی دینے کا فیصلہ کیا ہے، آئندہ5سالوں میں حکومت کی خصوصی توجہ زراعت پر رہے گی، حکومت لائیو اسٹاک اور فشریز کےشعبے میں کام کرنا چاہتی ہے، آئل سیڈز کی پیداوار کے لئے بھی اقدامات کررہے ہیں، خوردنی تیل کا استعمال کرنے کیلئے آگاہی مہم چلائی جائے گی۔

گیس بحران سے متعلق فواد چوہدری نے کہا کہ2016-17سے صارفین کو گیس کے اضافی بلز بھیجے جارہے ہیں، گیس کے اضافی چارج سے32لاکھ بلز میں اوور بلنگ ہوئی، گیس بل اضافے سےمتعلق تحقیقات جاری ہیں.

حکومت گیس صارفین کو اضافی ڈھائی ارب روپے واپس کرے گی، گیس چوری میں بڑے لوگوں کا نام بھی آئے گا یہ پورا نیٹ ورک ہے، بڑی کمپنیوں کو گیس کنکشن دینے سے عوام کو نقصان پہنچ رہا ہے۔

ایک سوال کے جواب میں ان کا کہنا تھا کہ متعلقہ محکموں کو باربار تلقین کی ہے کہ معاشی حالات کا احساس کریں، بیوروکریٹس کو بھی اپنی ذمہ داری کااحساس کرنا ہوگا، نیشنل آئی ٹی بورڈ کا ازسرنو جائزہ لینے کا فیصلہ کیا گیا ہے، حکومت کو ڈیجیٹل کرنے کا ایک روڈ میپ دیا جائے گا۔

پاکستان میں اس وقت مشکل معاشی حالات ہیں، وزیراعظم اخراجات محدود کرنے پر زور دے رہے ہیں، ڈیٹ پالیسی کوآرڈی نیشن آفس کے ڈی جی عبدالرحمان وڑائچ ہونگے، وزارتوں کے ذیلی اداروں کے سربراہان کی تقرریوں کا طریقہ کار طے کرلیا گیا ہے۔

وزیر اطلاعات نے بتایا کہ کابینہ اجلاس میں سرکاری جائیدادوں کےحوالے سے بھی بات ہوئی، سرکاری جائیدادوں کی فروخت کیلئے ٹاسک فورس قائم کی گئی ہے، اس کے علاوہ نیشنل انفارمیشن ٹیکنالوجی بورڈ کی تنظیم نو کا فیصلہ کیا گیا ہے، اس حوالے سے این آئی ٹی بورڈ کو خود مختار ادارہ بنایا جارہا ہے، احتساب عدالت نمبر2راولپنڈی سےاسلام آبادمنتقل کرنے کا فیصلہ ہواہے۔

فواد چوہدری نے کہا کہ کرتارپور راہداری پر مذاکرات کا ایک اور دور ہوگا،6.8کلومیٹر طویل کرتار پور راہداری تعمیر کی جائے گی، اجلاس کے دوران میڈیا پر نشر ہونے والی خبر سے متعلق ان کا کہنا تھا کہ اسد عمر بھائیوں کی طرح ہے، تلخ کلامی نہیں ہوئی، کابینہ میں تو اس طرح باتیں ہوتی رہتی ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں