The news is by your side.

Advertisement

وفاقی حکومت نے وزیر اعظم نیشنل ہیلتھ پروگرام کا نام تبدیل کر دیا

اسلام آباد :وفاقی حکومت نے وزیر اعظم نیشنل ہیلتھ پروگرام کا نام تبدیل کرکے صحت سہولت پروگرام رکھ دیا ہے، عامر کیانی کا کہنا ہے کہ صحت سہولت پروگرام کادائرہ ملک بھر میں پھیلا دیا ہے، 9 کروڑ افرادصحت انصاف کارڈ سےمستفید ہوں گے۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی حکومت نے وزیر اعظم نیشنل ہیلتھ پروگرام کا نام تبدیل کر دیا، وزیراعظم نیشنل ہیلتھ پروگرام کا نام “صحت سہولت پروگرام ” رکھ دیا جبکہ ہیلتھ کارڈ کانام تبدیل کر کے”صحت انصاف کارڈ” رکھ دیاگیا ہے۔

وزارت قومی صحت ، اسٹیٹ لائف کارپوریشن میں معاہدہ طے پاگیا ، صحت سہولت پروگرام پر عملدآمد کیلئے معاہدے پر دستخط کی تقریب ہوئی ، جس میں وفاقی وزیر صحت ، اسٹیٹ لائف کارپوریشن کے نمائندوں نے شرکت کی۔

وفاقی وزیر صحت عامر کیانی کا کہنا ہے کہ صحت سہولت پروگرام کادائرہ ملک بھر میں پھیلا دیا ہے، ڈیڑھ کروڑخاندانوں کوصحت سہولت پروگرام کاحصہ بنا دیا ہے۔

عامر کیانی نے کہا ملک بھرمیں 9کروڑ افرادصحت انصاف کارڈ سےمستفید ہوں گے ، صحت انصاف کارڈ کا پیکج 7 لاکھ 20 ہزار روپے کر دیا ہے۔

مزید پڑھیں : حکومتی صحت کارڈ سے عام آدمی کتنے روپے تک کا علاج کرواسکے گا؟

یاد رہے دسمبر 2018 میں وفاقی وزیرصحت عامرکیانی کا کہنا تھا کہ شہری کی صحت وزیر اعظم کی اولین ترجیح ہے، صحت کارڈ سے عام آدمی سوا 7لاکھ تک کا علاج کرواسکے گا، کوشش ہے 2019 کے اختتام تک صحت کی مفت سہولتیں دیں۔

وزیرصحت کا کہنا تھا کہ بڑھتی غربت کی وجوہات میں سےایک صحت پرغیرمعمولی اخراجا ت ہیں، ہیلتھ اسکیم پر عملدرآمد سے 8 کروڑ افراد کا اندراج ہوگا، وزیراعظم کی خواہش پر صحت کارڈ کے دائرہ کار میں اضافہ کردیا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں