The news is by your side.

Advertisement

شناختی کارڈ کی تصدیق کرنا کیا ملکی مفاد کے خلاف ہے،چوہدری نثار

اسلام آباد: سیف سٹی پروجیکٹ کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وفاقی وزیرداخلہ کا کہناتھاکہ شناختی کارڈ کی تصدیق کرنا کیا ملکی مفاد کے خلاف ہے،شہریوں کو شناختی کارڈ کی تصدیق میں تکلیف کا سامنا نہیں کرنا پڑے گا.

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد میں وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے سیف سٹی پروجیکٹ کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ شاہراہ دستور پر بند سڑکوں کو کھول دیاگیا ہے.

وفاقی وزیرداخلہ کا کہنا تھا کہ سیف سٹی پروجیکٹ پر پندرہ کروڑ ڈالرز کی لاگت آئے گی،اُن کا کہنا تھا کہ ہر جگہ پولیس کو تعینات نہیں کیاجاسکتا لیکن کیمروں کے ذریعے سیکورٹی کو بہتر بنایاجاسکتا ہے.

اُن کا تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہنا تھا غیر قانونی سمز کی تصدیق کا عمل مقررہ ریکارڈ مدت میں مکمل کیاگیا،جبکہ ڈھائی لاکھ شناختی کارڈ،انتیس ہزار پاسپورٹ کو بلاک کیا گیا،اور چھ سو سے زائد نادرا کے کرپٹ افراد کو نکالا گیا.

چوہدری نثار علی خان کا کہنا تھا کہ کیا عوام شناختی کارڈ کے لیے قطاروں میں کھڑی ہورہی ہے جو مجھ پر تنقید کی جارہی ہے اُن کا کہنا تھا کہ عوام کو قطاروں میں کھڑا نہیں کیا جائےگا.

وفاقی وزیرداخلہ کا را کے ایجنٹ کلبھوشن یادو کے متعلق کہنا تھا کہ بھارتی قونصل جنرل کو را کے ایجنٹ تک رسائی نہ دینے کا فیصلہ کیا ہے،چوہدری نثار کا مزید کہنا تھا کہ کچھ ممالک اقتصادی راہدارہی کے منصوبے کے خلاف ہیں.

واضح رہےچوہدری نثار علی خان کا کہنا تھا کہ اسلام آباد کی سیکورٹی کو موجودہ پولیس کے ذریعے بہتر بنائیں گے،انہوں نے کہا کہ چھ ماہ بعد اپنا ریکارڈ آپ کےسامنے رکھوں گا.

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں