وزیراعظم ہاؤس کا خرچہ 1 ارب سے کم ہوکر چند لاکھ تک آگیا، فواد چوہدری -
The news is by your side.

Advertisement

وزیراعظم ہاؤس کا خرچہ 1 ارب سے کم ہوکر چند لاکھ تک آگیا، فواد چوہدری

عوام کے پاس دوا کے پیسے نہیں تو وزیراعظم کیسے شاہانہ انداز میں رہ سکتا ہے

لاہور: وفاقی وزیراطلاعات فواد چوہدری نے کہا ہے کہ بھینسیں فروخت کرنے کا مقصد کوئی مالی فائدہ نہیں بلکہ سادگی مہم کو عوام تک پہنچانا تھا، کفایت شعاری مہم کیوجہ سے ہی وزیراعظم ہاؤس کا ماہانہ خرچہ 1 ارب سے کم ہوکر چند لاکھ تک پہنچ گیا۔

لاہور میں منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراطلاعات کا کہنا تھا کہ لوگوں کے پاس دواکے پیسےنہیں تو ایسی صورت میں وزیراعظم کیسےشاہانہ اندازمیں رہ سکتاہے۔

اُن کا کہنا تھا کہ عمران خان کی سادگی مہم پر تنقید شروع ہوگئی، ملک کا غریب طبقہ حکومتی کارکردگی سے مطمئن نہیں تھا مگر اب ہماری جدوجہد اُن کے لیے ہی ہے، پہلے وزیراعظم ہاؤس کا ماہانہ خرچہ 1 ارب سے زائد تھا جو اب چند لاکھ میں ہونے لگا، ہماری حکومت صحت، تعلیم اور صفائی پر زیادہ توجہ دے رہی ہے۔

مزید پڑھیں: صدرمملکت کی سادگی کی مثال، عارف علوی بغیر پروٹوکول اسلام آباد سے کراچی پہنچے

اُن کا کہنا تھا کہ عمران خان نےکرپشن کےخلاف آوازاٹھائی،ماحولیاتی آلودگی پربات کی، وہ ایک نظریہ بن کر ابھرے اور لوگوں کو اب اُن سے بہت زیادہ تواقعات ہیں۔

وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ لوگ بھوک و افلاس کی زندگی گزار رہے تھے اُس کے باوجود حکومت نے عوام کے لیے کچھ نہیں کیا بلکہ وزیراعظم ہاؤس کی خراب گاڑیوں کی مرمت پر کروڑوں روپے خرچ کردیے گئے۔

فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ عمران خان نے ہمیشہ متوسط طبقےکے لوگوں کےلئے سیاست کی، تحریک انصاف محنت کی بدولت اقتدارمیں آئی اور اب ہم لوگوں کی توقعات پر پورا اترنے کی کوشش کررہے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: وزیرِ اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار بھی عمران خان کی سادگی کے نقش قدم پر

وفاقی وزیر اطلاعات کا کہنا تھا کہ ماضی کی حکومتوں نےملک پر بہت زیادہ قرضوں کا بوجھ دیا، نوازشریف گئے تو ملک پر 28 ہزار کروڑ قرضہ تھا اسی طرح پرویزمشرف نے اقتدار چھوڑا تو 6 ہزار کروڑ قرضہ لیا جاچکا تھا۔

تحریک انصاف کے رہنما کا مزید کہنا تھا کہ ہم بھی اورنج لائن جیسےکھلونےبناکرپانچ سال پورےکرسکتےہیں مگر عمران خان عوام کی فلاح و بہبود کے لیے کام کرنا چاہتے ہیں، ملک کامڈل کلاس طبقہ ہماری سیاست کامحور ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں