The news is by your side.

Advertisement

پی ڈی ایم پشاور جلسہ: ’ اپوزیشن دو کلو گوشت کے لیے پوری گائے ذبح کرنا چاہتی ہے‘

اسلام آباد: وفاقی وزرا نے اپوزیشن اتحاد پاکستان ڈیموکریٹک موؤمنٹ (پی ڈی ایم) کے پشاور جلسے پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ اپوزیشن ذاتی مفاد کے لیے عوام کی جانوں سے کھیل رہی ہے۔

کورونا کے خطرے کے باوجود جلسے کرنے پر وفاقی وزرانے اپوزیشن جماعتوں پر تنقید کی۔ وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات سینیٹر شبلی فراز کا کہنا تھا کہ عدالتی احکامات کے باوجود جلسوں کا انعقاد قانون کی دھجیاں اڑانے کے مترادف ہے، پاکستان الیکٹرانک میڈیا ریگولیٹری اتھارٹی (پیمرا) کو خطرناک سرگرمی نشر کرنے کی اجازت نہیں دینا چاہیے۔

اُن کا کہنا تھا کہ ’شدید خطرات میں عوام کی زندگیوں کوداؤ پر لگانا سیاسی سفاکی ہے‘۔

وفاقی وزیر برائے سائنس اینڈ ٹیکنالوجی فواد چوہدری نے پی ڈی ایم قیادت کو نادان کہتے ہوئے کہا کہ ’ نادانوں۔۔۔ لوگوں کی زندگی داؤپرلگتی ہےتو پھر کس بات کی سیاست ہے؟، اپوزیشن دو کلو گوشت کے لیے پوری گائے ذبح کرنا چاہتی ہے، زندگی کے ساتھ اقتدار ہے جبکہ زندگی کو ہی خطرے میں ڈال دیا جائے تو سیاست نہیں ہوسکتی، اگر اتنا ہی شوق ہے تو ورچوئل جلسے کر کے شوق پورا کرلیں‘۔

مزید پڑھیں: پاکستان ڈیموکریٹک موؤمنٹ نے ایس او پیز کی دھجیاں اڑا دیں

وفاقی وزیر برائے صنعت و پیداوار حماد اظہر نے کہا کہ اپوزیشن کی کرونا پھیلاؤ مہم کو ان کی خودغرضی کا ثبوت ہے جبکہ وزیراعظم کے معاونِ خصوصی برائے سیاسی ابلاغ شہبازگل نے کہا کہ اپوزیشن ذاتی مفادکیلئےعوام کی جان کے درپر ہے، عوام جعل سازوں کو پہچان لیں جو بغض عمران میں ہر حد پار کرنے کے در پے ہیں۔

اسدعمر کا کہنا تھا کہ کرونا صرف خدشہ نہیں انسانی جانوں کیلئے خطرہ ہے، گزشتہ پندرہ روز میں وینٹی لیٹر پر منتقل ہونے والے مریضوں کی تعداد میں اضافہ ہوا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں