The news is by your side.

Advertisement

وفاقی جامعہ اردو میں کنٹریکٹ اساتذہ کو اچانک فارغ کر دیا گیا

کراچی: وفاقی جامعہ اردو میں معاہداتی اور کنٹریکٹ اساتذہ کو اچانک فارغ کر دیا گیا۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق وفاقی جامعہ اردو کے کنٹریکٹ اساتذہ کو فارغ کر دیا گیا ہے، جن کی تعداد درجنوں میں ہے، اور پہلے فروری اگست کے سیشنز کے لیے لیٹر بھی جاری کر دیے گئے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ جامعہ اردو کے قائم مقام وائس چانسلر کے غیر منطقی فیصلوں نے تعلیمی سیشن کو بحرانی کیفیت سے دو چار کر دیا ہے، غیر یقینی صورت حال کے بعد معاملات سنگین ہو گئے ہیں۔

دوسری طرف طلبہ بھی غیر یقینی صورت حال سے پریشان ہیں، اساتذہ نے کلاسز لینا چھوڑ دیا، اساتذہ کا مؤقف ہے کہ اب صورت حال کو سنھبالنا مشکل ہوگا۔

تمام ڈینز اور رجسڑرار نے اس فیصلے کی مخالفت کی ہے، ان کا کہنا ہے کہ جاری سیمسٹر میں نئے ٹیچرز کو کیسے ہائر کیا جائے گا، اس سلسلے میں انجمن اساتذہ عبدالحق کیمپس نے ہنگامی اجلاس بھی طلب کر لیا ہے۔

اساتذہ کا کہنا ہے کہ قائم مقام وائس چانسلر، جو علامہ اقبال اوپن یونیورسٹی کے وائس چانسلر بھی ہیں، ڈاکٹر ضیا القیوم نے طلبہ کا مستقبل داؤ پر لگا دیا ہے، وہ فیصلہ کر کے خود اسلام اباد چلے گئے۔

اساتذہ کا کہنا ہے کہ قائم مقام وائس چانسلر کو اس طرح کے اقدام کا ائینی حق حاصل نہیں، یونیورسٹی سینیٹ اس حوالے سے واضح ہدایات جاری کر چکا ہے، اچانک فیصلے کے بعد تعلیمی سرگرمیاں شدید متاثر ہو گئی ہیں۔

انجمن اساتذہ عبدالحق کیمپس نے مطالبہ کیا ہے کہ انتظامیہ اپنا فیصلہ واپس لے، غیر منطقی فیصلے جامعے کے لیے تباہ کن ہیں، اور سلیکشن بورڈ کا عمل مکمل کیا جائے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں