site
stats
بلوچستان

کوئٹہ میں کونگو وائرس سے افغانی خاتون جاں بحق

کوئٹہ : کوئٹہ کے فاطمہ جناح ٹی بی سینی ٹوریم اسپتال میں زیر علاج کانگو وائرس کی شکار خاتون کے جاں بحق ہونے کے بعد بلوچستان میں رواں سال کانگو سے ہلاک افراد کی تعداد 12 ہوگئی ہے۔

اسپتال ذرائع کے مطابق کانگووائرس کاشکار خاتون مریض فاطمہ بی بی کو 3 روز قبل افغانستان کے علاقے قندھار سے لاکر کانگو وائرس کے شبہ میں فاطمہ جناح ہسپتال میں داخل کیا گیا تھ جس کے مریضہ کے خون کے نمونے لیبارٹری بھجوائے گئے جن میں کانگو وائرس کی تصدیق ہوگئی ہے جو3 روز زیرعلاج رہنے کے بعد ہفتہ کی شب  دم توڑ گئیں۔

واضح رہے رواں سال ملک بھر میں کانگووائرس سے12 جاں بحق ہوچکے ہیں جب کہ صرف بلوچستان میں کانگو وائرس کے شُبے میں 84 مریض لائے گئے ہیں جن میں سے 38 مریض کوئٹہ میں اور بلوچستان کے مختلف علاقوں جیسے چمن میں 5 ،کچلاک میں 4،ژوب میں 2، گلستان کے 2، قلعہ سیف اللہ کے 2، زیارت میں 2، ہرنائی میں 1، پشین میں4، خانوزئی میں 4،جعفرآباد1، موسیٰ خیل1، چا غی1،مچھ1،کان مہترزئی1جبکہ افغانستان سے 22 کانگو وائرس کا شکار مریضوں کو کوئٹہ منتقل کیا گیا ہے۔

دوسری جانب بقرعید کے موقع پر دیہی علاقوں سے مویشیوں کی شہری علاقوں میں منتقلی کے دوران کونگو وائرس سے 4 افراد جاں بحق ہو چکے ہیں اس لیے ماہرین احتیاط بتاتے ہیں کہ مویشیوں منڈیوں کا رخ کرتے ہوئے جوتے،دستانے اور ماسک ضرور پہن لیے جائیں تا کہ کونگو وائرس کے حملے سے بچا جا سکے۔

 

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top