The news is by your side.

Advertisement

مودی کی مسلمان دشمنی، مسلم بادشاہ کے نام سے منسوب اسٹیڈیم کا نام تبدیل

نئی دہلی: مودی سرکار کی مسلمان دشمنی کا ایک اور ثبوت سامنے آ گیا، نئی دہلی کے فیروز شاہ کوٹلہ اسٹیڈیم کا نام تبدیل کرنے کا فیصلہ کر لیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق مودی حکومت کی مسلمان دشمنی پر مبنی اقدامات کا سلسلہ جاری ہے، اب مسلمان بادشاہ فیروز شاہ تغلق کے نام سے بنے کھیل کے میدان کا نام تبدیل کیا جا رہا ہے۔

بھارتی میڈیا کا کہنا ہے کہ فیروز شاہ کوٹلہ اسٹیڈیم کا نام بی جے پی رہنما ارون جیٹلی کے نام پر رکھا جائے گا، یاد رہے کہ بی جے پی کے رہنما اور سابق وزیر خزانہ ارون جیٹلی گزشتہ روز انتقال کر گئے تھے۔

فیروز شاہ کوٹلہ اسٹیڈیم مسلمان بادشاہ کے نام پر رکھا گیا تھا۔

تازہ ترین خبریں پڑھیں:  بھارت کے لیے فضائی حدود مکمل بند کرنے پرغور

فیروز شاہ تغلق سلطنت دہلی کے تغلق خاندان کا تیسرا حکمران تھا جس نے 1351 سے 1388 تک حکومت کی، وہ 1309 میں پیدا ہوئے، اور انتقال 20 ستمبر 1388 کو ہوا۔

فیروز شاہ کوٹلہ اسٹیڈیم کرکٹ کا میدان ہے جو فیروز شاہ تغلق کے نام پر بنایا گیا تھا، اس کی بنیاد 1883 میں رکھی گئی تھی اور یہ ایڈن گارڈنز، کلکتہ کے بعد بھارت کا دوسرا قدیم کرکٹ اسٹیڈیم ہے۔

واضح رہے کہ آج وفاقی وزیر سائنس اینڈ ٹیکنالوجی فواد چوہدری نے کہا ہے کہ بھارت کے لیے فضائی حدود بند کرنے پر غور کیا جا رہا ہے، انھوں نے اے آر وائی نیوز سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ وزیر اعظم عمران خان نے بھارت کے لیے فضائی حدود بند کرنے پر غور شروع کر دیا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں