The news is by your side.

Advertisement

بات چیت سے کشمیر کا مسئلہ حل کرنا چاہئے، عمران خان

لاہور: چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے کہا ہے کہ پاکستان اور بھارت ایٹمی قوتین ہیں جن کے پاس امن کے سوا کوئی دوسرا راستہ نہیں ہے ۔

چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے بھارت کے دو روزہ دورے کے بعد لاہور ایئرپورٹ پرمیڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ بھارت میں نریندر مودی سے ملاقات کی ،نریندرمودی سے اچھے ماحول میں بات چیت ہوئی، عمران خان نے بتایا کہ دونوں ممالک میں کچھ لوگ ہیں جوبات چیت کوآگے نہیں بڑھتے دیکھ سکتے۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ دونوں ممالک میں غربت کےخاتمےکاحل تجارتی تعلقات ہیں، دونوں ممالک کےرہنماؤں کومذاکراتی عمل جاری رکھنےپراتفاق کرناچاہیے، برصغیر نےآگےبڑھناہےتو رکاوٹیں دورکرنا ہوں گی۔

انہوں نے کہا کہ دونوں ملکوں کوماضی سےنکل کر مستقبل کی جانب بڑھناچاہئے، بات چیت سے کشمیر کا مسئلہ حل کرنا چاہئے، وسیع النظری سے کشمیر کا مسئلہ حل کیا جا سکتا ہے، ٹینشن کم کرنے کے لئے دونوں ممالک کے درمیان کرکٹ سیریزہونی چاہئے، بھارت میں اقلیتیں محفوط نہ ہونگی تو پاکستان بھی متاثر ہو گا، لیڈر شپ اقلیتوں کو برابر کے حقوق حاصل ہیں۔
عمران خان کا کہنا تھا کہ مغربی طاقتیں پاک بھارت تعلقات میں سب سے بڑی رکاوٹ ہیںکرکٹ بحالی سے دونوں ممالک کے عوام کے رابطے مستحکم ہوں گے۔

پاکستان کے تمام پروسٹی ممالک سے اچھے تعلقات ہونے چاہئیں، چین نے 40 کروڑعوام کو 20برس میں غربت سے باہر نکالا، پاکستان اور بھارت میں ہر واقعے کا الزام ایک دوسرے پر لگایا جاتا ہے، غربت کا خاتمہ صرف دوطرفہ تجارت سے ہی ممکن ہے۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ کسی ادارے کی نجکاری نہیں ہونے دیں گے نہ ہی ملازمین کا معاشی قتل ہونے دیں گے.

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں