قوم کا پیسہ قوم پرخرچ ہوگا، دبئی اور لندن نہیں جائے گا،اسد عمر
The news is by your side.

Advertisement

قوم کا پیسہ قوم پرخرچ ہوگا، دبئی اور لندن نہیں جائے گا،اسد عمر

اسلام آباد : وزیرخزانہ اسد عمر کا کہنا ہے کہ جو کام یہ چالیس سال میں نہ کرسکے ہم سے پوچھتےہیں چالیس دن میں کیوں نہ کیے، قوم کا پیسہ قوم پرخرچ ہوگا، دبئی اور لندن نہیں جائے گا۔

تفصیلات کے مطابق وزیرخزانہ اسدعمر نے قومی اسمبلی میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ گزشتہ سال صرف 61ارب روپے ترقیاتی منصوبوں پر خرچ کئے گئے، اس سال گزشتہ سال کی نسبت زیادہ رقم ترقیاتی منصوبوں پر خرچ ہوگی، ٹرانسمیشن لائن بچھاتے وقت چھوٹے صوبوں پر توجہ نہیں دی گئی۔

وزیرخزانہ کا کہنا تھاکہ آج بجلی ہوبھی تو بلوچستان کو بجلی نہیں دی جاسکتی، چند ماہ پہلے نارووال سمیت ہر طرف دودھ اورشہدکی نہریں بہہ رہی تھیں،بڑی قومیں بنتی ہی اس طرح ہیں جو اپنے کمزور علاقوں کا خیال رکھیں۔

چند ماہ پہلے نارووال سمیت ہر طرف دودھ اورشہدکی نہریں بہہ رہی تھیں

اسد عمر نے کہا کہ گزشتہ حکومت کےوزرابہت بڑی باتیں کرتےتھے، گزشتہ حکومت نے2ماہ میں آئی ایم ایف کےپاس جانےکااعلان کردیاتھا اور اپنی پچھلی حکومت پرساراملبہ ڈال دیاتھا کہ آصف زرداری کی حکومت کیا نظام چھوڑ کر گئی تھی۔

ان کا کہنا تھا کہ زرداری حکومت کے اختتام تک 480ارب روپے کے گردشی قرضے تھے، گذشتہ ایک سال میں گردشی قرضوں میں453ارب روپےکااضافہ ہوا اور اب گردشی قرضےمجموعی طور پر1200ارب روپےسےتجاوز کرچکےہیں۔

وزیر خزانہ نے کہا نوید قمر کے دور میں گیس کے نظام میں کوئی مسئلہ نہیں تھا، زرداری صاحب کےدورمیں خسارےکے باوجود پاکستان اسٹیل چل رہی تھی، کرائسز کوئی بھی نہیں لیکن ن لیگی حکومت نے بیواؤں کی پنشن روکی، حالات درست تھے تو ن لیگ حکومت نے بیواؤں کی پنشن کیوں روکی۔

اسد عمر کا مزید کہنا تھا کہ اسٹیل مل گزشتہ3 سال سے بند ہے، کہتےہیں معیشت درست ہے، پاکستان اسٹیل کی تنخواہیں اورپنشن روکنے پر 2 اموات ہوئیں، اسٹیل مل میں تنخواہیں نہ ملنے سے2 لوگ خود کشیاں کرچکے ہیں۔

انھوں نے کہا وزیراعظم کیلئے گاڑیاں خریدنے کیلئے پیسے ہیں لیکن ان ورکرز کیلئے نہیں، ہم پرتنقید کرنے سے پہلے پہلے ان معاملات کو بھی دیکھ لیتے۔

وزیر خزانہ کا کہنا تھا کہ نان فائلرز پر 3طرح کی چھوٹ کے ساتھ پابندی دوبارہ عائد کر رہےہیں،وراثت سے ملنے والی جائیداد پر بھی استثنیٰ دیا جائے گا اور ایل پی جی پر30فیصد ڈیوٹیز کم کرکے10 فیصد کر رہے ہیں، اوورسیز پاکستانی یہاں سرمایہ کاری کرنا چاہتے ہیں۔

قوم کا پیسہ قوم پرخرچ ہوگا، جائیداد لندن میں بنے گی نہ ہی دبئی میں

اسد عمر نے کہا کہ بڑے نان فائلرز کے خلاف مہم کا آغاز کل سے ہوچکا ہے، 169 بڑے نان فائلرز کو نوٹسز جاری ہوچکےہیں، ابھی بھی وقت ہے ٹیکس نیٹ کے اندر آجائیں، قوم کا پیسہ قوم پرخرچ ہوگا، جائیداد لندن میں بنے گی نہ ہی دبئی میں، ریاست اتنی کمزور نہیں جتنی نظرآتی ہے،ہم پیسہ نکلوا بھی سکتے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ ودہولڈنگ ٹیکس کی معلومات ایجنٹس کی ذمہ داری ہےہمیں پہنچائیں، بینکوں میں بڑی بڑی رقوم رکھنے والوں کی معلومات لیں گے، ٹیکس نہ دینے والوں کی تلاش کی جائے گی، ڈیم فنڈ کے لئے دیا گیا استثنیٰ واپس نہیں لیا جائے گا، کسانوں کیلئے 6 سے 7ارب کی سبسڈی پہلے ہی منظور کرچکے ہیں۔

تنقید ضرور کریں لیکن معیشت کہاں کھڑی ہےیہ سچ قوم کوبتائیں۔

وزیرخزانہ کا شہباز شریف کے بیان پر ردعمل

وزیرخزانہ نے شہباز شریف کے بیان پر ن لیگ کی ترقی کااسمبلی میں پول کھول دیا اور کہا کہ شاید یہ شیر سکڑ کر بلی جتنا ہوگیا ہے، اس لئے شہباز شریف کو بلی یاد آرہی ہے، 6 ماہ اور 2سال میں لوڈشیڈنگ ختم کرنے کے وعدے کئے گئے، پچھلی حکومت کے سستے منصوبے فوری 3روپے بجلی میں اضافہ تھا، اللہ ایسی سستی بجلی سے قوم کو بچائے۔

اسدعمر کا کہنا تھا کہ الیکشن کمیشن کی پابندی کے باوجود موٹروے کے منصوبے کیسےچلے؟ ن لیگ سے پہلے زرداری دور میں بیرونی سرمایہ کاری بہتر تھی، ن لیگ اپنی کوتاہی کاذمہ دارالیکشن کمیشن کو نہ ٹھہرائے، اپوزیشن لیڈرکہتے ہیں زرداری حکومت کا آڈٹ کریں ہم ساتھ ہیں، اپنے ادھورے منصوبوں کا ملبہ الیکشن کمیشن پر ڈالا جاتا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں