The news is by your side.

Advertisement

ڈی جی نیب خیبر پختونخوا کے خلاف ایف آئی آر درج

پشاور: ہائی کورٹ کے حکم پر ڈی جی نیب خیبر پختونخواہ کے خلاف  تشدد کے جرم میں ایف آئی آر درج کرلی گئی۔

ڈی جی نیب سلیم شہزاد پر نائب قاصد پر تشدد کا الزام ہے جس پر پہلے ہی کرپشن کے الزامات ہیں۔ سلیم شہزاد نے سپریم کورٹ سے رجوع کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق پشاور ہائی کورٹ نے 12 مئی کو ڈی جی نیب خیبر پختونخواہ سلیم شہزاد اور تفتیشی افسر محمد عمیر بٹ کے خلاف ایف آئی آردرج کرنے کا حکم دیا۔

نائب قاصد سردار گل خطاب پر الزام ہے کہ انہوں نے میونسپل آفیسر محبوب علی سے 2 لاکھ روپے رشوت لی۔ نیب کی جانب سے انہیں 30 اپریل کو گرفتار کیا گیا تھا۔ جسٹس مسرت ہلالئی اور جسٹس وقار احمد پر مشتمل بینچ نے ان کے کیس کی سماعت کی۔ دوران سماعت سردار گل خطاب کے بیٹے کے وکیل کی جانب سے درخواست دائر کی گئی کہ ان کے مؤکل پر تشدد کیا جارہا ہے اور وہ اس وقت بری حالت میں ہیں۔

پشاور ہائی کورٹ نے درخواست پر کارروائی کرتے ہوئے ڈی جی نیب خیبر پختونخوا سلیم شہزاد اور تفتیشی افسر محمد عمیر بٹ کے خلاف ایف آئی آر درج کرنے کا حکم دے دیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں