site
stats
پاکستان

عزیز آباد میں کشیدگی، ایم کیوایم کے کارکنان کیخلاف مقدمہ درج

کراچی : گذشتہ روز عزیز آباد میں اشتعال انگیزی کا مقدمہ سرکار کی مدعیت میں درج کرلیا گیا ہے، مقدمے میں اشتعال انگیزی اور شہریوں کو اکسانے کی دفعات شامل ہیں۔

ایم کیوایم پاکستان اور ایم کیوایم لندن کے کارکنان آمنے سامنے آئے تو قانون حرکت میں آگیا، یادگار شہداء جانے اور عزیزآباد میں ہنگامہ آرائی پر سرکار کی مدعیت میں مقدمہ درج کرلیا گیا۔

مقدمے میں متحدہ لندن کے گرفتار سات کارکنان سمیت چالیس سے زائد نامعلوم افراد کو نامزد کیا گیا ہے، مقدمے میں اشتعال انگیزی ،نقص امن اورشہریوں کو تشدد پراکسانے کی دفعات شامل ہیں۔

یاد رہے کہ گزشتہ روز میئر کراچی وسیم اختر کو آخری مقدمے میں ضمانت ملنے کے بعد سینٹرل جیل سے رہا کردیا گیا تھا، جس کے بعد وہ ایک ریلی کی صورت مزارِ قائد پہنچے اور فاتحہ خوانی کی بعد ازاں وہ عزیز آباد میں واقع ایم کیو ایم کے شہدائے یاد گار حاضری دینے پہنچنا تھا لیکن ایم کیوایم لندن کے حامیوں نے عزیزآباد میں اکھٹے ہو کر بانی ایم کیو ایم کے حق میں نعرے بازی کی۔


مزید پڑھیں : یاد گارِ شہداء عزیز آباد، ایم کیو ایم لندن کے 7 کارکنان گرفتار


تا ہم پولیس نے موقع پر پہنچ کر ایم کیو ایم لندن کے 7 کارکنان کو گرفتار کر کے عزیز آباد پولیس تھانے منتقل کردیا تھا۔

بعد ازاں ایم کیو ایم پاکستان کے رہنماؤں نے شہدائے یادگار پر حاضری دیے بغیر پی آئی بی میں واقع عارضی دفتر روانہ ہو گئے تھے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top