The news is by your side.

Advertisement

نیب پیشی پر ہنگامہ آرائی، مریم نواز اور 300 افراد کے خلاف مقدمہ درج

لاہور: قومی احتساب بیورو (نیب) نے مسلم لیگ ن کی نائب صدر کی پیشی کے دوران ہنگامہ آرائی کا مقدمہ  مریم نواز سمیت دیگر قائدین اور 300 کارکنان کے خلاف درج کرادیا۔

نمائندہ اے آر وائی نیوز کے مطابق نیب دفتر کے باہر ہنگامہ آرائی کا مقدمہ چوہنگ تھانے میں نیب کی مدعیت میں  مریم نواز سمیت مسلم لیگ ن کی اعلیٰ قیادت اور 300 نامعلوم افراد  کے خلاف مقدمہ درج کرلیا گیا۔

ایف آئی آر میں زخمی پولیس اہلکاروں کا ذکر بھی کیا گیا جبکہ مقدمے میں نیب دفتر پر حملے، توڑ پھوڑ اور کار سرکار میں مداخلت سمیت دیگر دفعات شامل کی گئیں ہیں۔

یاد رہے مریم نواز کی نیب میں پیشی کے موقع پر صورتحال کشیدہ ہوگئی تھی، نیب دفتر کے باہر لیگی کارکنان کی جانب سے پولیس پر پتھراؤ کیا گیا جبکہ لیگی کارکنوں نے نیب دفتر کے باہر رکاوٹیں ہٹادیں تھیں۔

مزید پڑھیں: پنجاب حکومت کا لیگی قیادت اور کارکنوں کے حملے کی تفصیلات جاری کرنے کا فیصلہ

پولیس کی جانب سے لیگی کارکنوں کومنتشر کرنے کیلئے نیب آفس کے باہر واٹر کینن بھی طلب کی تھی، لیگی کارکنان گاڑی ایل ای 3378میں پتھر سےبھرے شاپرلیکرآئے تھے ، لیگی کارکنوں نے گاڑی کےاندر سے پتھر نکال کر پولیس پر برسائے تھے۔

لیگی کارکنوں کے پتھراؤ کے باعث نیب دفتر پرکھڑیوں کے شیشےٹوٹ گئے جبکہ لیگی کارکنان نے نیب دفتر کے باہر بیریئر بھی توڑنےکی کوشش کی تھی۔

یہ بھی پڑھیں: مریم نواز کے قافلے میں جعلی نمبر پلیٹس والی گاڑیاں تھیں، راجہ بشارت

پولیس نے لیگی کارکنان کو منتشر کرنے کی کوشش کی تو پتھراؤ کا سلسلہ شروع ہوا جس کے بعد نیب دفتر کے باہر موجود نفری نے شیلنگ کی جبکہ ہنگامہ آرائی کرنے والے متعدد افراد کو گرفتار بھی کیا۔مسلم لیگ ن نے گرفتار ہونے والے کارکنان کی فوری رہائی کا مطالبہ کیا جبکہ مریم نواز نے اپنی پریس کانفرنس میں اعلان کیا کہ مسلم لیگ ن حراست میں لیے جانے والے کارکنان کو قانونی معاونت فراہم کرے گی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں