The news is by your side.

Advertisement

جسقم ریلی میں ایک بار پھر پاکستان مخالف نعرے، مقدمہ درج

کراچی: جیے سندھ قومی محاذ (جسقم) کی ریلی میں پاکستان مخالف نعرے لگ گئے، پولیس نے ملک کے خلاف نعرے لگانے پر مقدمہ درج کر لیا۔

تفصیلات کے مطابق جسقم کے خلاف پاکستان مخالف نعرے لگانے پر اسٹیل ٹاؤن تھانے میں مقدمہ درج کر لیا گیا ہے، جس میں بغاوت سمیت سنگین دفعات شامل کیے گئے ہیں۔

مقدمے میں جسقم بشیر قریشی گروپ کے چیئرمین صنعان قریشی، صدر ملیر ضمیر حاجانو اور وائس چیئرمین الہیٰ بخش سمیت دیگر افراد کو نامزد کیا گیا ہے۔

مقدمے کے متن میں کہا گیا ہے کہ ریلی کے شرکا نے پاکستان اور قومی اداروں کے خلاف نعرے بازی کی تھی، ریلی کے شرکا نے پاک فوج کے خلاف بھی نعرے لگائے، چیئرمین جسقم کارکنان کو فسادات اور دہشت گردی پھیلانے کے لیے اکساتا رہا، ریلی کے شرکا کو حملے کے لیے بھی اکسایا گیا۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز کراچی پریس کلب پر سندھی قوم پرست جماعت جیے سندھ قومی محاذ کی جانب سے پیغام سندھ مارچ کا اہتمام کیا گیا تھا جس کی قیادت جسقم چیئرمین صنعان خان قریشی نے کی تھی۔

صنعان قریشی نے مارچ سے خطاب میں کہا تھا کہ سات کروڑ سندھی کسی بھی قیمت پر سندھ کی تقسیم کی کسی بھی سازش کو قبول نہیں کریں گے، سندھ کی آزادی کے لیے سائیں جی ایم سید اور شہید بشیر خان قریشی کے نظریے کے تحت جدوجہد جاری رکھی جائے گی، اردو بولنے والے بھی سندھ کو اپنا وطن سمجھ کر ہمارا ساتھ دیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں