The news is by your side.

Advertisement

مذاکرات کی خواہش کو کمزوری نہ سمجھا جائے، فردوس عاشق اعوان

اسلام آباد : معاون خصوصی برائے اطلاعات فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ ہماری مذاکرات کی خواہش کو کمزوری نہ سمجھا جائے، سیاست کے بارہویں کھلاڑی کو بلاول اورشہباز نے اپنا لیڈر مان لیا۔

یہ بات انہوں نے اسلام آباد میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہی، انہوں نے کہا کہ وزیراعظم آج بھی مقبول ترین لیڈر ہیں، مولانا فضل الرحمان نے ہر قسم کے وعدوں سے لاتعلقی کا اظہار کیا، ایک عالم دین وعدے سے پیچھے ہٹتا ہے تو ناقابل معافی جرم ہے۔

انہوں نے کہا کہ اپنے ذاتی مفاد کیلئے اسلام کے بنیادی اصولوں کی نفی کی جارہی ہے، ہماری مذاکرات کی خواہش کو کمزوری نہ سمجھا جائے، جس پارلیمنٹ میں مولانا خود ہوں تو حلال ورنہ وہ حرام ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ بلاول بھٹو اور شہبازشریف نے مولانا کو اپنا لیڈرتسلیم کرلیا ہے، سیاست کے بارہویں کھلاڑی کو بلاول بھٹو اور شہباز شریف نے اپنا لیڈر مان لیا، ج ان کو مولانا کے دھرنے میں ادھار میں آکر اپنا درد بیان کرنا پڑا، ثابت ہوتا ہے عوام اب ان کی آواز پر لبیک کہنے کو تیار نہیں۔

معاون خصوصی نے کہا کہ عمران خان کے بغض میں یہ سب ایک گھاٹ کا پانی پی رہے ہیں، عمران خان نے پہلی تقریر میں ہی کہہ دیا تھا سب چور ایک جگہ جمع ہوں گے، آج وقت نے ثابت کردیا عمران خان نے درست کہا تھا۔

فردوس عاشق اعوان کا کہنا تھا کہ15سیاسی جماعتیں مل کر بھی لوگوں کو نکال نہ سکیں، اپوزیشن پاور شو دکھانے میں ناکام ہوگئی۔5دن سڑکوں پر دھکے کھا کر مذہبی کارڈ استعمال کیا گیا، مذہبی کارڈ استعمال کرنے کے باوجود یہ ناکام رہے،

 ان کا مزید کہنا تھا کہ گلگت میں بسیں نہ کھانا دیا گیا اورلوگ محبت میں نکلے، لیڈر اور مال کی محبت میں فرق واضح ہوتا ہے، مذاکراتی کمیٹی کی سفارشات کے بعد لائحہ عمل طے کریں گے، سیاسی اداکاروں کے ساتھ ڈائیلاگ کرتے رہیں گے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں