The news is by your side.

Advertisement

رانا ثناءاللہ کو بے گناہ کہنے والے ذہنی ابہام کا شکار ہیں، فردوس عاشق اعوان

اسلام آباد : معاون خصوصی برائے اطلاعات و نشریات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ رانا ثناءاللہ کا کیس بہت واضح ہے ان کو بے گناہ کہنے والے ذہنی ابہام کا شکار ہیں، آرمی چیف جنرل جاوید باجوہ قوم کی ضرورت ہیں۔

یہ بات انہوں نے اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہی، انہوں نے کہا کہ پارلیمنٹ کی بالادستی کویقینی بنانا حکومت اور اپوزیشن دونوں کی مشترکہ ذمہ داری ہے، قومی مفاد پر سیاست نہیں ہونی چاہیے، ملک کا مفاد ہی ہم سب کی ترجیح ہونی چاہیے،

معاون خصوصی کا کہنا تھا کہ اس ملک کی سلامتی اور دفاع ہم سب کی ذمہ داری ہے جسے ہمیں یقینی بنانا ہے، چیف آف آرمی اسٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ قوم کی ضرورت ہیں، پاکستان حالت جنگ میں ہے اورایسی صورتحال میں سپہ سالار بدلے نہیں جاتے ،ہر قوم اپنے کمانڈر کے پیچھے کھڑی ہوتی ہے.

انہوں نے کہا کہ الیکشن کمیشن اور قانون سازی کے حوالے سے اپوزیشن کے ساتھ رابطے میں ہیں، امید ہے کہ معاملات خوش اسلوبی سے حل ہو جائیں گے۔

فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ رانا ثناءاللہ کا کیس بہت واضح ہے یہ کریڈٹ اے این ایف کو جاتا ہے جس نے جرات اور بہادری سے طاقتور مافیا پر ہاتھ ڈالا،قانون کے کٹہرے میں سب برابر ہیں،اگر اے این ایف نے کسی کو قانون کےکٹہرے میں کھڑا کیا ہے تو قانون اپنا راستہ اختیار کرے گا

ان کا مزید کہنا کہ وزراء کے بیانات میں کوئی تضاد نہیں ہے، رانا ثناءاللہ کو بے گناہی کے سرٹیفکیٹ دینے والوں کے ذہنوں میں ابہام ہے، رانا ثناءاللہ کیس کا چارج فریم تب ہو گا جب ٹرائل شروع ہو گا، ان کے کیس میں تو ابھی ٹرائل شروع ہونا ہے، چالان پیش ہونے کے بعد چارج فریم ہوتا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں