The news is by your side.

Advertisement

مولانا صاحب عوام سے مسترد ہونے پر ذاتی انتقام نہ لیں، فردوس عاشق اعوان

اسلام آباد : معاون خصوصی اطلاعات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ مولانا صاحب عوام سے مسترد ہونے پر ذاتی انتقام نہ لیں۔

تفصیلات کے مطابق سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر فردوس عاشق اعوان نے اپنے پیغام میں کہا کہ مولانا صاحب ضد اور ہٹ دھرمی چھوڑیں، مولانا صاحب 73 کے آئین کے تناظرمیں جمہوریت کی پاسداری کریں۔

فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ مذاکرات جمہوری عمل کا نام ہے جس کے آپ خود داعی رہے ہیں، مذاکرات بے معنی قرار دے کر ذہن کی کھڑکیوں کو کیوں بند کرنا چاہتے؟ وہم کا علاج لقمان حکیم کے پاس بھی نہیں تھا۔


معاون خصوصی برائے اطلاعات نے کہا کہ مولانا صاحب دھاندلی ہوئی تھی تو صدر کا الیکشن کیوں لڑا تھا؟ آپ کے صاحبزادے نے ایم این اے کا حلف کیوں اٹھایا تھا؟ ایک سال بعد دھاندلی کا واویلا عوام کو گمراہ کرنے کے سوا کچھ نہیں ہے، دھاندلی کا واویلا جمہوری نظام کمزور کرنے کے سوا کچھ نہیں ہے۔

ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے اپنے پیغام میں مزید کہا ہے کہ مولانا صاحب عوام سے مسترد ہونے پر ذاتی انتقام نہ لیں۔

کنٹینر پر وہ 5 خاندان ہیں جو ملک پر ہمیشہ حکمرانی کرتے رہے، فردوس عاشق اعوان

یاد رہے کہ گزشتہ ہفتے معاون خصوصی برائے اطلاعات فردوس عاشق اعوان کا کہنا تھا کہ غور کیا جائے تو کنٹینر پر وہ 5 خاندان ہیں جو ملک پر ہمیشہ حکمرانی کرتے رہے، اب وہ حکمرانی اپنی اولادوں تک پہنچانے کے لیے ریاست پر حملہ آور ہیں۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں