The news is by your side.

Advertisement

امریکا: تین شہروں میں دہشت پھیلانے والے لڑکے نے پولیس بیان میں عجیب بات بتا دی

ایریزونا: امریکی ریاست ایریزونا کے علاقے فینکس میں 90 منٹ ڈرائیو کے دوران فائرنگ کے واقعے نے تین شہروں میں چند گھنٹوں کے اندر دہشت پھیلا دی تھی، پولیس نے فائرنگ کرنے والے 19 سالہ لڑکے کو گرفتار کر کے عدالت میں پیش کر دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق ایریزونا کے بلدیہ فینکس میں فائرنگ واقعے کی فرد جرم ایک نوجوان پر عائد کر دی گئی ہے، حکام نے بتایا ہے کہ جمعرات کے روز ہونے والے اس واقعے میں 1 شخص ہلاک اور 12 دیگر زخمی ہوئے تھے۔

عدالت میں پیش کردہ پولیس رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ایریزونا کے لڑکے 19 سالہ اشین ٹرائیکاریکو نے فینکس میں سڑکوں پر تین گھنٹوں تک ڈرائیو کرتے ہوئے جگہ جگہ فائرنگ کی، جس سے ایک شخص ہلاک ہوا، اور ایک درجن لوگ زخمی ہوئے۔

جمعے کو جمع کرائے گئے عدالتی کاغذات کے مطابق لڑکے نے پولیس کو بیان دیا ہے کہ وہ سمجھ رہا تھا کہ ایک اور جگہ فائرنگ کے واقعے میں ملوث ہونے کی وجہ سے لوگ اس کے پیچھے پڑے ہوئے ہیں۔

لڑکے پر عدالت میں جمعرات کو تین شہروں میں کم از کم 8 مقامات پر ایک سفید ایس یو وی گاڑی سے دیگر گاڑیوں اور پیدل چلنے والوں پر فائرنگ کرنے کا فرد جرم عائد کر دیا گیا، اس واقعے نے پورے علاقے میں ہر طرف دہشت پھیلا دی تھی۔

ٹرائیکاریکو نے پولیس بیان میں کہا کہ فینکس میں ایک ماہ قبل وہ سیکورٹی گارڈ کی ڈیوٹی کے دوران فائرنگ کے ایک واقعے میں ملوث تھا، اس وجہ سے وہ سمجھ رہا تھا کہ لوگ اس کے پیچھے ہیں، آس پاس چلنے والی ہر گاڑی سے ہر آدمی اس کی طرف پستول تانے دکھائی دیتا تھا۔

انیس سالہ لڑکے کو عدالت میں پیشی کے بعد جیل بھیج دیا گیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں