پہلا عاصمہ جہانگیر اسکالر شپ‌ پاکستانی طلبہ ثناء گل کے نام
The news is by your side.

Advertisement

پہلا عاصمہ جہانگیر اسکالر شپ‌ پاکستانی طالبہ ثناء گل کے نام

اسلام آباد : برطانوی ہائی کمشنر نے پہلا عاصمہ جہانگیر اسکالر شپ پاکستانی طالبہ ثناء گل کو دے دیا، اسکالرشپ کا مقصد انسانی حقوق کی سرگرم کارکن عاصمہ جہانگیر کو خراج عقیدت پیش کرنا ہے۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد میں عاصمہ جہانگیر اسکالر شپ دینے کی تقریب کا انعقاد کیا گیا، جس میں پاکستانی طالبہ ثناء گل کو پہلا عاصمہ جہانگیر اسکالر شپ دیا گیا۔

تقریب سے خطاب میں برطانوی ہائی کمشنر ٹامس ڈریو نے کہا کہ عاصمہ جہانگیر ایک قابل ذکر خاتون تھیں ،وہ انسانی حقوق کی علمبردار اور خواتین اور بچوں اور مظلوم لوگوں کے حقوق کیلئے لڑیں۔

برطانوی ہائی کمشنر کا کہنا تھا کہ پاکستانی شیوننگسکالر خواتین کو سکالر شپ دینا عاصمہ جہانگیر جیسی غیر معمولی شخصیت کے کام کو واضح کرنا ہے۔

انھوں نے اسکالرشپ حاصل کرنے والی طالبہ ثنا گل کو بھی مبارک باد پیش کی۔

اس موقع پر ثناء گل نے کہا کہ عاصمہ جہانگیر کے وہ الفاظ مجھے اچھی طرح یاد ہیں کہ مضبوط لوگ مشکلات کے ذریعے اپنی طاقت تلاش کرتے ہیں اور تم ان میں سے ایک ہو ۔

تقریب میں عاصمہ جہانگیر کی بیٹی منزہ جہانگیر نے ثناء گل کو شیوننگ اسکالر شپ 19 – 2018 حاصل کرنے پر مبارکباد دی اور کہا کہ برطانوی حکومت کا عاصمہ جہانگیر سکالر شپ پروگرام ایوارڈ شروع کرنے پرشکریہ ادا کیا ۔

منزہ جہانگیر نے کہا کہ پاکستان کی خواتین حقیقی تبدیلی لائیں گی ، یہ سکالر شپ خواتین کو بااختیار بنائے گا۔

خیال رہے کہ برطانوی ہائی کمشن نے گزشتہ برس عاصمہ جہانگیر سکالر شپ شروع کرنے کا اعلان کیا تھا، یہ ہر سال کسی ایک طالبہ کو پیش کیا جائے گا، جس کے تحت وہ کسی بھی برطانوی یونیورسٹی میں ماسٹرز کی تعلیم حاصل کر سکتی ہیں۔

شیوننگ اسکالر شپ برطانیہ کی یونیورسٹی میں ایک سالہ ماسٹر پروگرام قابل ترین لوگوں کو دیا جاتا ہے، اس سال 23خواتین سمیت 62 پاکستانیوں کو شیوننگ سکالر شپ دیا گیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں