ڈی آئی خان میں سائبرکرائم کا پہلا مقدمہ پولیس اہلکارکے خلاف درج -
The news is by your side.

Advertisement

ڈی آئی خان میں سائبرکرائم کا پہلا مقدمہ پولیس اہلکارکے خلاف درج

ڈی آئی خان: ڈیرہ اسمعیل خان میں وفاقی تحقیقاتی ادارے نے سائبر کرائم ایکٹ کے تحت شہر کا پہلا مقدمہ درج کرلیا، مقدمہ بیوی کی درخواست پر شوہر کے خلاف درج کیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی تحقیقاتی ادارے ایف آئی اے کے سائبر کرائم ونگ نے خاتون کی شکایت پر اس کے شوہر کو حراست میں لیا ، ڈیرہ اسماعیل خان سائبر سرکل نے الیکٹرانک جرائم کی روک تھام کے لئے بنائے گئے پی آئی سی اے ایکٹ 2016 کے تحت سوشل میڈیا پر ہراسانی اور بے جا تنگ کرنے کے خلاف پہلی ایف آئی آر درج کر کے ملزم کو گرفتار کیا ہے۔

ذرائع کے مطابق امتیاز الحسن نامی شہری کے خلاف اس کی بیوی نے فیس بک پر ہراسانی اور دھمکیوں کی شکایت درج کرائی تھی ،جس پر سائبر ونگ نے پی پی سی کی دفعات 506 اور 509 کے تحت ایف آئی آر نمبر 1/2018 درج کر کے پولیس اہلکار کو گرفتار کر لیا ۔

ملزم سبط الحسن ہیڈ کانسٹیبل ہے اور بطور نیب کورٹ ایڈیشنل سیشن جج 1 ڈیرہ کی عدالت میں تعینات ہے، انچارج سائبر کرائم تھانہ کا کہنا ہے کہ متاثرہ شہریوں کی کرائم کے حوالے سے درخواستوں کی تعداد جتنی مرضی ہو ،ان کا ازالہ کرنا ہمارے فرائض میں شامل ہے ۔

انہوں نے مزید کہا کہ ملزمان کا قلع قمع کرنا ہمارے فرائض منصبی میں شامل ہے اور یہ کہ والدین اپنے بچوں خصوصا نوجوانوں کو سوشل میڈیا کے ذمہ دارانہ استعمال بارے آگاہ کریں تاکہ مستقبل میں کسی بھی پریشانی سے بچاؤ ممکن ہو۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں