The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب کے قدیم شہر جبہ میں تاریخ کا پہلا کھلا میوزیم

ریاض : جبہ سعودی عرب کے شمال مغرب میں واقع شہر حائل کا خوبصورت ترین صحرائی سیاحتی مرکز ہے جسے سعودیوں سمیت دنیا بھر سے سینکڑوں سیاح دیکھنے کے لیے آتے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق جبہ قدیم انسانی تاریخ کا ایک کھلا عجائب گھر ہے جسے یونیسکو نے سنہ 2015 میں عالمی ورثے کی فہرست میں شامل کیا تھا، اب سعودی محکمہ سیاحت و آثار قدیمہ نے اسے جدید خطوط پر استوار کر دیا ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ جبہ شہر میں ہجری دور کے قدیم ترین انسانی مراکز کے کھنڈرات ہیں جہاں چٹانوں پر مختلف نقوش اور جانوروں کی تصویریں بنی ہوئی ہیں۔

عرب میڈیا کا کہنا ہے کہ سیاح انہیں دیکھ کر آسانی سے سمجھ سکتے ہیں کہ قدیم دور کے انسان کیسے زندگی گزارتے تھے، جبہ شہر مسافروں کی اہم منزل رہا ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق یہ جزیرہ نما عرب کی سیاحت کے لیے آنے والے مغربی مستشرقین (مشرقیات کے سکالرز) کا مرکز شمار ہوتا ہے۔

جبہ سیاحتی قافلوں کی شاہراہ پر واقع تھا جسے و قدیم اقوام کا جیتا جاگتا عجائب گھر بھی شمار کیا جاتا ہے، اس کی تاریخی عمارتوں کے اطراف میں نخلستان ہیں۔

محکمہ سیاحت و آثار قدیمہ نے جبہ شہر کے سیاحوں کے لیے جدید ترین سہولتیں فراہم کی ہیں، یہاں پیدل چلنے والوں کے لیے راہداریاں ہیں۔ چٹانوں پر جانوروں اور انسانوں کے نقوش دیکھنے کے لیے لکڑی کی سیڑھیاں بنائی گئی ہیں اور سیاحوں کی رہنمائی کے لیے عربی اور انگریزی زبانوں میں بورڈ بھی نصب کیے گئے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں