The news is by your side.

Advertisement

سعودی بادشاہ شاہ فیصل کی مریضہ کے لیے خصوصی اجازت

ریاض: سعودی عرب کے شہر حقل میں ہوائی جہاز کے لیے پہلی بار رن وے ایک مریضہ کے لیے بنایا گیا تھا جس کے لیے سابق سعودی فرمانروا شاہ فیصل نے خصوصی اجازت دی تھی۔

سعودی ویب سائٹ کے مطابق سعودی عرب میں پہلی مرتبہ فضائی ایمبولینس کے لیے تبوک ریجن کی کمشنری حقل میں ہنگامی رن وے بنایا گیا تھا، شاہ فیصل نے پہلی بار سعودی عرب میں فضائی ایمبولینس کے ذریعے مریضہ کو لانے کی اجازت دی تھی۔

سعودی مورخ عبد اللہ العمرانی نے ایک مقامی اخبار سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ سنہ 1960 کی دہائی میں ایک مریضہ کو جو تپ دق میں مبتلا تھی حقل لایا گیا تھا۔

اس وقت حقل پولی کلینک کے ڈاکٹر محمد جلال الدین احمد نے کہا تھا کہ خاتون کی حالت نازک ہے اور اسے گاڑی کے بجائے ایمبولینس سے منتقل کیا جائے، اس زمانے میں سینے کے امراض کا قریبی ترین اسپیشلسٹ اسپتال طائف میں تھا۔

ڈاکٹر محمد جلال کو جدہ سے پیغام دیا گیا کہ بیمار خاتون کو ہوائی جہاز سے منتقل کرنے کا اسے اختیار نہیں، اس کا فیصلہ علاقے کے گورنر ہی کر سکتے ہیں جو اس وقت شاہ فیصل بن عبدالعزیز تھے۔

شاہ فیصل نے خاتون کی بیماری کی اطلاع ملتے ہی اسے فضائی ایمبولینس کے ذریعے حقل سے طائف منتقل کرنے کا حکم جاری کردیا، فضائی ایمبولینس کا سہارا اس لیے لیا گیا کیونکہ اس وقت تک حقل میں طیاروں کے اترنے کے لیے رن وے نہیں تھا۔

نازک صورتحال کے پیش نظر فوجیوں اور حقل کے باشندوں نے مل کر فضائی ایمبولینس کے لیے ہنگامی بنیادوں پر رن وے کا انتظام کیا اور اس طرح بیمار خاتون کو سینے کے امراض کے طائف اسپتال پہنچا دیا گیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں