site
stats
پاکستان

کراچی کی 5 بڑی کچی آبادیوں کو ریگولرائز کردیا گیا

کراچی: سندھ حکومت نے کراچی کی 5 بڑی کچی آبادیوں کو ریگولرائز کردیا جب کہ 15 کچی آبادیوں کو فہرست میں شامل کرلیا ہے۔

وزیر اعلیٰ سندھ  کے مشیر برائے کچی آبادی غلام مرتضیٰ بلوچ کی ہدایت پر سندھ کچی آبادی اتھارٹی نے کراچی کی 5 کچی آبادیوں کو ریگولرائز کردیا اور 15 کو کچی آبادی کی لسٹ میں شامل کردیا ہے۔

ڈائریکٹر کچی آبادی عبدالغنی جوکھیو نے بتایا کہ کراچی کی 5 کچی آبادیوں شانتی نگر، عوامی زمرد کالونی، قائداعظم کالونی، مصطفی کالونی اور کنڈو گوٹھ کو کچی آبادی کو ریگولرائز کردیا گیا ہے، جس کا نوٹیفکیشن بھی جاری کردیا گیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ 15 کچی آبادیوں حسن بروہی گوٹھ، رمضان بروہی گوٹھ، جان محمد بروہی گوٹھ، نورمحمد بروہی گوٹھ اسکیم 33، غنی آباد، ہائی وے کالونی، ھندو پاڑہ اور دیگر کچی آبادیوں کو لسٹ میں شامل کرکے رجسٹرڈ کردیا گیا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ ریگولرائز ہونے والی یہ وہ کچی آبادیاں ہیں جو 1985 سے کراچی میں قائم ہیں، جو کے تقریباً 5 ہزار گھروں پر مشتمل ہیں۔

ڈائریکٹر نے بتایا کہ کراچی کی دو کچی آبادیوں بیدل کالونی اور عوامی زمرد کالونی میں سڑکوں کی تعمیر ومرمت اور ترقیاتی کام کا آغاز اسی ہفتے شروع کردیا جائے گا۔

انہوں نے مزید کہا کہ کچی آبادی اتھارٹی مکینوں کو مالکانہ حقوق دینے کہ لیے دن رات کوشاں ہے، قبضہ مافیا کے خلاف بھی ایکشن لیا جارہا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top