The news is by your side.

Advertisement

شیخوپورہ میں پانچ سالہ بچہ مبینہ زیادتی کے بعد قتل، لواحقین سراپا احتجاج

شیخوپورہ: صوبہ پنجاب میں ایک اور بچے کو مبینہ زیادتی کے بعد قتل کردیا گیا ہے۔

ملک کے سب سے بڑے صوب پنجاب میں بچوں کو اغوا وزیادتی کے بعد قتل کرنے کا سلسلہ بند نہ ہوسکا ہے، صوبائی حکومت کی جانب سے ان واقعات کی روک تھام کے باوجود اس طرح کے واقعات نے بچوں سمیت والدین کو خوف میں مبتلا کردیا ہے۔

اسی طرح کا ایک اور دلخراش واقعہ شیخوپورہ کی تحصیل شرقپور شریف کے ڈھامکے میں پیش آیا، جہاں پانچ سالہ عبدالرحمن گزشتہ شام مدرسہ سے واپسی پر لا پتہ ہوا، بچے کی گمشدگی پر اہل خانہ نے فوری طور پر مقامی پولیس اسٹیشن میں رپورٹ درج کرائی،تلاش بھی کی گئی مگر ناکامی ہوئی۔

آج صبح بچے کی ہاتھ پاوں بندھے ہوئی لاش برآمد ہوئی، واقعے کی اطلاع ملنے پر پولیس جائے حادثے پر پہنچی اور بچے کی لاش کو تحویل میں لے کر میڈیکل کے لیے اسپتال روانہ کیا اور جگہ کو سیل کردیا۔

فوری طور پر کرائم سین اور فرانزک سائنس ایجنسی کی ٹیموں کو طلب کیا گیا، جنہوں نے جائے وقوعہ سے شواہد اکٹھے کئے، اس موقع پر ڈی پی او غلام مبشر میکن اور ایس پی انویسٹی گیشن بھی موجود رہے۔

دوسری جانب لواحقین نے الزام عائد کیا ہے کہ گمشدگی کی رپورٹ درج کروانے کے باوجود بھی پولیس بچے کو برآمد نہ کر سکی، لواحقین نے وزیر اعلی پنجاب سے انصاف کی اپیل کی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں