The news is by your side.

Advertisement

فائیو جی ٹیکنالوجی : جاپانی کمپنیوں کے نیٹ ورک کے پھیلاؤ کیلئے اقدامات

ٹوکیو : جاپان میں موبائل فون کمپنیاں اپنے تمام صارفین کیلئے جدید فائیوجی ٹیکنالوجی کی فراہمی کیلئے کوشاں ہیں، اس سلسلے میں کمپنیاں اپنے بیس اسٹیشنز کو مزید بہتر کرنے کیلئے اقدامات کر رہی ہیں۔

فائیو جی سروس موبائل فون انٹرنیٹ کی پانچویں جنریشن ہے جو تیز ترین ڈیٹا ڈاﺅن لوڈنگ، اپ لوڈنگ اور بہترین کنکشن کے ذریعے کوریج کو یقینی بناتی ہے۔

تفصیلات کے مطابق نئے سال2021 میں جاپان کے ایسے علاقوں کی تعداد میں بڑا اضافہ ہونے کی توقع ہے جہاں لوگ جدید ترین 5جی نیٹ ورک استعمال کرسکیں گے۔

ملک کی بڑی موبائل فون کمپنیاں ارزاں نرخوں پر تیز رفتار اور زیادہ گنجائش والے فائیو جی نیٹ ورکس متعارف کروانے کی منصوبہ بندی کر رہی ہیں۔

کمپنیوں نے فائیو جی ٹیکنالوجی کی خدمات گزشتہ سال شروع کی تھیں تاہم اب تک یہ صرف محدود علاقوں میں دستیاب ہیں، اب کمپنیاں اپنے بیس اسٹیشنز کو تیزی سے بہتر بنانے پر توجہ دے رہی ہیں۔

سروس فراہم کرنے والی کمپنی این ٹی ٹی دوکومو کو توقع ہے کہ اس کی فائیو جی خدمات مالی سال 2021 کے اختتام تک ملک کی55فیصد آبادی کو دستیاب ہوں گی۔ توقع ہے کہ کے ڈی ڈی آئی اور سوفٹ بینک آبادی کے 90 فیصد حصے کو 5جی خدمات فراہم کریں گے۔

ذرائع کے مطابق موبائل فون کے اخراجات کم کرنے کی حکومتی اپیل کے جواب میں این ٹی ٹی دوکومو اور سوفٹ بینک موسم بہار سے فائیو جی کے سستے پیکج متعارف کروانے کی منصوبہ بندی کر رہی ہیں۔

دریں اثناء اسمارٹ فون تیار کرنے والی کمپنیاں5جی کے نت نئے نمونے نکال رہی ہیں، اس طرح امید ہے کہ جاپانی صارفین رواں سال سے فائیو جی کی نئی ٹیکنالوجی کا بھرپور استعمال شروع کردیں گے۔

یاد رہے کہ اس سے قبل چین، جنوبی کوریا، امریکا اور برطانیہ گزشتہ سال فائیو جی ٹیکنالوجی کا آغاز کرچکے ہیں، چینی کمپنیوں کی جانب سے پہلے فائیو جی نیٹ ورک کو سال2021متعارف کرنے کا فیصلہ کیا گیا تھا تاہم اسے فوری طور پر متعارف کرادیا گیا۔

اس سے قبل جنوبی کوریا، امریکا اور برطانیہ رواں سال فائیو جی ٹیکنالوجی کا آغاز کرچکے ہیں۔چینی کمپنیوں کی جانب سے پہلے فائیو جی نیٹ ورک کو آئندہ سال متعارف کرنے کا فیصلہ کیا گیا تھا تاہم اب اسے فوری طور پر متعارف کرادیا گیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں