سونے کا درست زاویہ مختلف مسائل سے بچائے -
The news is by your side.

Advertisement

سونے کا درست زاویہ مختلف مسائل سے بچائے

رات کی پرسکون اور گہری نیند ہر جاندار کے لیے ایک لازمی جز ہے۔ ایک عام اندازے کے مطابق ہم اپنی زندگی کا ایک تہائی حصہ نیند میں گزارتے ہیں۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ اگر آپ سونے کے دوران بے چین اور بے آرام رہے ہیں تو یہ نیند آپ کو تازہ دم کرنے کے بجائے مختلف مسائل میں مبتلا کردے گی۔

ماہرین ان مسائل سے نمٹنے کے لیے سونے اور لیٹنے کے درست زاویے تجویز کرتے ہیں۔ آپ بھی وہ درست زاویے جانیں۔


کندھے کا درد

اگر آپ نیند سے اٹھنے کے بعد کسی ایک کندھے میں تکلیف محسوس کر رہے ہیں تو اس کا مطلب ہے کہ آپ ساری رات اس کندھے کے بل پر سوئے ہیں۔

کندھے کے درد سے نجات پانے کے لیے بالکل سیدھا، کمر کے بل سوئیں اور معدے کی جگہ پر ایک ہلکا پھلکا تکیہ رکھ لیں۔ اس زاویے میں آپ کے کندھے بالکل آرام دہ اور درست پوزیشن میں رہیں گے۔

1


کمر کا درد

سونے کے دوران کمر کا درد بھی اس وقت ہوتا ہے جب آپ الٹے یا پیٹ کے بل سوئیں۔ اس پوزیشن میں آپ کی کمر آرام دہ حالت میں نہیں ہوتی۔

اس سے چھٹکارہ پانے کے لیے سب سے آسان طریقہ بھی کمر کے بل سیدھا سونا ہے۔

2


گردن کا درد

گردن کے درد سے نجات کے لیے ایک نرم تکیہ اس طرح رکھیں کہ آپ کا سر، گردن اور کندھوں کا کچھ حصہ تکیے کے اوپر ہو۔

اگر دونوں بازوؤں کے نیچے بھی نرم تکیے رکھے جائیں تو اس سے جسم سیدھی اور آرام دہ پوزیشن میں آجائے گا اور گردن یا کاندھوں پر دباؤ نہیں پڑے گا جس سے آپ گردن یا کندھوں کے درد سے نجات پالیں گے۔

3


نیند نہیں آرہی؟

اگر آپ بے خوابی کا شکار ہیں تو سب سے پہلے موبائل، لیپ ٹاپ، ٹیبلیٹس اور ٹی وی کے ریموٹ کو اپنے بستر سے دور رکھ دیں جہاں یہ آپ کی پہنچ سے باہر ہوجائیں۔

موبائل کی نیلی اسکرین آپ کے دماغ میں نیند کے خلیات ور آنکھوں کو سخت نقصان پہنچاتی ہیں اور اندھیرے میں موبائل کا استعمال آپ کو نابینا کرنے کا سبب بھی بن سکتا ہے۔

مزید پڑھیں: آنکھوں کی بیماریوں سے بچنے کی تجاویز

رات میں نیند نہ آنے کی وجہ سونے سے 6 گھنٹے قبل تک مرغن کھانے، چائے، کافی، چاکلیٹ یا سوڈا کا استعمال بھی ہوسکتا ہے۔

یہ اشیا دماغ کے خلیات کو جگاتی ہیں جس سے آپ اگلے کئی گھنٹوں کے لیے نیند سے محروم ہوجاتے ہیں۔

سونے سے قبل کسی کتاب کا مطالعہ کریں۔ یہ آپ کے دماغ کو پرسکون کر کے سونے کی طرف مائل کرے گی۔

روز صبح اور شام میں ہلکی پھلکی ورزش بھی آپ کے دوران خون میں اضافہ کرے گی جس سے آپ کو جلد نیند آئے گی۔


رات میں آنکھ کھل جانا

اگر سونے کے 2 گھنٹے بعد آپ کی آنکھ کھل گئی ہے، یا آپ کو محسوس ہو کہ آپ بے آرام نیند سو رہے ہیں تو یہ یقیناً سونے سے قبل موبائل کے استعمال کا نتیجہ ہے۔

موبائل کی نیلی اسکرین دماغ کے خلیوں کو بے سکون کرتی ہے جس کے باعث آپ پرسکون نیند سونے سے محروم رہتے ہیں۔

علاوہ ازیں سونے سے قبل الکوحل کا استعمال بھی آپ کے دماغی خلیات کو بے آرام کرتا ہے۔

مزید پڑھیں: نیند کیوں رات بھر نہیں آتی؟

سونے سے قبل کمرے کا درجہ حرات بھی موسم کے لحاظ سے معمول کے مطابق کرلیں۔ بہت زیادہ سرد، یا گرم درجہ حرارت بھی آپ کی نیند میں خلل پیدا کرے گا اور آپ پرسکون نیند نہیں سو سکیں گے۔


جلدی اٹھنے کا طریقہ

اگر آپ صبح 7 بجے اٹھنا چاہتے ہیں تو صبح 6 بجے، ساڑھے 6، پونے 7 اور 7 بجے کے 4 الارم لگانے کے بجائے 7 بجے کا ایک الارم لگائیں اور اس کے بجتے ہی اٹھ کھڑے ہوں۔

الارم کو بار بار بند کرنے کے لیے اٹھنا بھی آپ کے دماغ کو تذبذب میں مبتلا کردیتا ہے اور نہ تو وہ صحیح سے سو پاتا ہے اور نہ ہی جاگ پاتا ہے۔

اس قسم کے الارم سے اٹھنے والے افراد دن بھر تھکن اور سستی کا شکار رہتے ہیں۔


خراٹوں سے نجات

گو کہ سیدھا سونا اکثر مسائل سے چھٹکارہ دلا سکتا ہے، لیکن خراٹوں سے نجات پانے کے لیے آپ کو کاندھے کے بل سونا ہوگا۔

آرام دہ حالت میں کاندھے کے بل کروٹ لے کر ٹانگوں کو موڑ لیں۔ اس سے پیٹ پر ہلکا سا دباؤ پڑے گا اور آپ خراٹوں سے نجات پاسکیں گے۔

4


پٹھوں کا اکڑ جانا

اگر سونے کے دوران آپ کی ٹانگوں کے پٹھے اکڑ جاتے ہیں اور اٹھنے کے بعد آپ کو ان میں کافی دیر تک تکلیف محسوس ہوتی ہے تو اس کا آسان حل ورزش کرنا اور سونے سے قبل پنجوں کا ہلکا سا مساج کرنا ہے۔

ورزش کو معمول بنا لینے سے آپ کے اکثر جسمانی مسائل ویسے ہی ختم ہوجائیں گے۔ مستقل طور پر پٹھوں کے اکڑاؤ سے نجات پانے کا حل باقاعدگی سے ورزش اور مساج کرنا ہے۔


سینے کی جلن

سینے کی جلن سے بچنے کے لیے الٹے ہاتھ کی کروٹ پر سوئیں۔ اس سے معدے پر دباؤ پڑتا ہے اور وہ غذائی اجزا کو واپس جسم کے اوپر کی طرف نہیں بھیج پاتا جو سینے کی جلن کا سبب بنتا ہے۔


تلووں پر کھجلی

اکثر افراد کو نیند کے دوران ایڑھیوں اور تلووں پر کھجلی محسوس ہوتی ہے۔ اس سے بچنے کے لیے پیروں کے قریب گول تکیہ رکھیں۔

کھجلی محسوس ہو تو پاؤں کو اس سے سہلائیں۔ اس سے تلووں کا دوران خون تیز ہوگا اور خون کی نالیاں بھی فعال ہوجائیں گی جس سے کھجلی میں فوری طور پر کمی واقع ہوگی۔

مضمون و تصاویر: بشکریہ برائٹ سائیڈ


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں