The news is by your side.

نوازشریف کی آج حاضری سےاستثنیٰ کی درخواست منظور

اسلام آباد : احتساب عدالت میں سابق وزیراعظم نوازشریف کے خلاف فلیگ شپ ریفرنس کی سماعت پیر تک ملتوی ہوگئی۔

تفصیلات کے مطابق احتساب عدالت کے جج محمد ارشد ملک نے نوازشریف کے خلاف فلیگ شپ ریفرنس کی سماعت کی۔

نواز شریف آج احتساب عدالت میں پیش نہیں ہوئے، ان کے وکیل کی جانب سے حاضری سے استثنیٰ کی درخواست دائر کی گئی۔

درخواست میں کہا گیا کہ کلثوم نوازکے لیے فاتحہ خوانی، دعائیہ تقریب رکھی ہے، آج حاضری سے استثنیٰ کی درخواست منظور کی جائے۔

احتساب عدالت کے معزز جج محمد ارشد ملک نے نوازشریف کی آج حاضری سے استثنیٰ کی درخواست منظور کرلی۔

نوازشریف کے وکیل خواجہ حارث نے تفتیشی افسر محمد کامران پرپانچویں روز بھی جرح جاری رکھی۔

احتساب عدالت نے سابق وزیراعظم نوازشریف کے خلاف فلیگ شپ ریفرنس کی سماعت پیر تک ملتوی کردی، نوازشریف کے وکیل خواجہ حارث تفتیشی افسرپر پیر کے دن بھی جرح جاری رکھیں گے۔

سابق وزیراعظم نے گزشتہ روز احتساب عدالت میں سماعت کے دوران اپنا 342 کا بغیر حلف نامے کا بیان قلمبند کروایا تھا۔

نوازشریف کا کہنا تھا کہ مطمئن ہوں ساری نسلیں کھنگالنے کے بعد کرپشن نہیں نکلی، ذاتی اور سیاسی قربانی دی، 40 سال کا کیرئیر صاف اور شفاف ہے۔

نوازشریف نے بیان ریکارڈ کرانے کے بجائےعدالت میں منصوبے گنوانا شروع کردیے


سابق وزیراعظم کا کہنا تھا کہ مفروضوں پر کیس کو چلایا گیا، کیس منی لانڈرنگ، ٹیکس چوری اور کرپشن کے الزامات پرشروع ہوا، بے رحمانہ احتساب کے بعد بات آمدن سے زائد اثاثہ جات پرآگئی۔

نوازشریف کا کہنا تھا کہ میں احتساب سے پیچھے نہیں ہٹا، اللہ تعالیٰ پر کامل یقین ہے، عدالت سے انصاف کی توقع ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں