The news is by your side.

Advertisement

35سال بعد قاتل گرفتار

فلوریڈا : پولیس نے قتل کی واردات کے 35سال بعد قاتل کو گرفتار کرلیا، ملزم نے لاس اینجلس کے ایک موٹل میں 40سالہ شخص کو گولی مار کر قتل کردیا تھا۔

تفصیلات کے مطابق فلوریڈا کے ایک فرد پر35 سال سے بھی زیادہ عرصہ قبل لاس اینجلس کے ایک موٹل کے اندر40 سالہ شخص کو گولی مار کا الزام عائد کیا گیا تھا۔

ملزم پر الزام ہے کہ اس نے اپنے ساتھی کے ساتھ موٹل میں ایک بچے کے سامنے بندوق کی نوک پر اس کی ماں سے زیادتی بھی کی تھی۔ لاس اینجلس کاؤنٹی ڈسٹرکٹ اٹارنی کے دفتر کے مطابق66 سالہ مینیئل فریگا مدن پر ایک خاص قتل کے الزام میں قتل، ڈکیتی، عصمت ریزی، چوری اور تشدد کے الزامات لگائے گئے تھے، وہ بغیر کسی پیرول کے جیل میں سزا بھگت رہا ہے۔

فریگا مدن کو یکم مئی کو فلوریڈا میں ڈی این اے شواہد کے بعد اسے12 جولائی 1984 کو اس الزم کے تحت گرفتار کیا گیا۔ واقعہ کے مطابق واردات والے دن دو افراد زبردستی ایک موٹل کے کمرے میں داخل ہوئے اور بچے کے سامنے گن پوائنٹ پر 23 سالہ خاتون کو زیادتی کا نشانہ بنایا۔

ذرائع کے مطابق ملزمان نے جانے سے قبل جانی ولیمز نامی ایک شخص کو رقم اور منشیات فراہم نہ کرنے پر فائرنگ کرکے موت کے گھاٹ اتار دیا اور فرارہوگئے۔

بعد ازاں جب یہ معاملہ کئی دہائیوں تک حل نہ ہوا تو لاس اینجلس کاؤنٹی شیرف کے محکمہ سرد مقدمہ کے قتل کے یونٹ کے جاسوسوں نے تفتیش کا کام سنبھال لیا۔

ڈی این اے ٹیکنالوجی کا استعمال کرتے ہوئے موٹل بیڈنگ سے جمع کردہ غیر قانونی فرانزک شواہد کا تجزیہ کیا گیا، شیرف کے جاسوس جوزف پورکل نے میڈیا کو بتایاکہ حاصل ہونے والے ڈی این اے کا فریگا مدن کے ڈی این اے سے مماثلت ہے جو کیلیفورنیا اور فلوریڈا میں اس کی مجرمانہ ریکارڈ میں موجود ہے۔

میامی ڈیڈ کاؤنٹی کی اصلاحات اور بحالی کے محکمہ کے قیدی ریکارڈز کے مطابق فریگا مدن اب بھی میامی میں زیر حراست ہے، سفاکانہ جرم میں ملوث دوسرے شخص کی شناخت نہیں ہوسکی ہے اور شیریف کا محکمہ ابھی بھی اس معاملے کی تحقیقات کر رہا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں