The news is by your side.

Advertisement

فلوریڈا میں اژدھوں نے گھڑیال کا شکار شروع کردیا

واشنگٹن : فلوریڈا میں موجود گھڑیال سمیت چھوٹی جسامت کے جانور دیوہیکل اژدھوں کا شکار ہوکر معدومی کی جانب بڑھ رہے ہیں، جس کے باعث علاقے کے ماحولیاتی نظام کو شدید خطرات لاحق ہیں۔

تفصیلات کے مطابق امریکی ریاست فلوریڈا کے دلدلی علاقے میں موجود مگر مچھ کی نسلیں معدومی کا شکار ہیں جس کے باعث علاقے کا ماحولیاتی نظام خراب ہونے کا شدید خدشہ ہے۔ مذکورہ علاقے میں گھڑیال کے معدوم ہونے کی بڑی وجہ دیو ہیکل اژدھے ہیں۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ علاقے میں آباد برمی دیو ہیکل اژدھے گھڑیال، لومڑی اور دیگر جانوروں کو اپنے غذا بنارہے ہیں جس کے باعث ان جانوروں کی نسل معدوم ہوتی جارہی ہے جس کے باعث ماحولیات کو شدید خطرہ لاحق ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق امریکی ماہرین کا کہنا ہے کہ فلوریڈا کے دلدلی علاقے میں موجود اژدھے کسی سیاح یا مقامی شہری کی غفلت یا غیر ذمہ داری کا نتیجہ ہے، جس کی وجہ سے اژدھے کے جوڑا علاقے میں افزائش پاگیا اور پورے علاقے میں پھیل گیا۔

امریکی ماہرین کا کہنا ہے کہ سنہ 1970 میں اژدھے کی پہلی جوڑی نظر آئی تھی، لیکن اب تقریباً ڈیڑھ لاکھ کے قریب اژدھے موجود ہیں۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ برمی نسل کے ان اژدھوں کی لمبائی 7 میٹر  اور 113 کلو گرام وزنی ہیں، جو  4 فٹ لمبے گھڑیال کو بھی نگل جاتے ہیں، ماہرین کا خیال ہے کہ گھڑیال کے ساتھ ساتھ چھوٹی جسامت کے جانور  بھی اژدھوں کا شکار  بن کر ختم ہوتے جارہے ہیں۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ اگر ان اژدھوں پر قابو نہیں کیا گیا تو یہ دیگر علاقوں میں بھی پھیل جائیں گے اور دلدلی علاقہ ویران ہوکر رہ جائے گا، امریکا کی جنگلی حیاتیات کے ماہرین کی جانب سے اژدھوں کے خلاف مہم شروع کی گئی ہے جس کے تحت 11 سو اژدھوں کو پکڑا گیا ہے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں