The news is by your side.

Advertisement

افغان تنازعے میں ہم کسی کے ساتھ نہیں ہیں ، شاہ محمود قریشی

اسلام آباد : وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ افغان تنازعے میں ہم کسی کے ساتھ نہیں ہیں، افغان عوام جوفیصلہ کریں گےاسےدیانت داری سےقبول کریں گے۔

تفصیلات کے مطابق وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے اے آر وائی نیوز کے پروگرام باخبر سویرا میں امریکا کی جانب سے افغان امن عمل سے ہاتھ اٹھانے کے حوالے سے کہا کہ امن کے راستے میں ہی افغانستان کی بقا ہے، افغانستان میں دیرپاامن کیلئےگفت وشنیدکےسواکوئی راستہ نہیں، امریکابیٹھےنہ بیٹھےافغانوں کو بیٹھ کر مستقبل کافیصلہ کرنا ہے۔

وزیرخارجہ کا کہنا تھا کہ افغانستان کے عوام امن چاہتے ہیں اور افغان طالبان کو بھی سوچنا ہے کہ وہ تنہا نہیں رہ سکتا، تاہم افغان طالبان کی جانب سےامن کی پیش کش امیدافزاہوگی، عوام کی طاقت کونہ سمجھنےوالاغلطی پرہوتاہے، کوئی بھی حکومت عوام کی رائےکےخلاف نہیں رہ سکتی۔

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ افغانستان میں فریقین کومل بیٹھناہوگا، ہم کسی کے ساتھ نہیں ہیں، افغان عوام جوفیصلہ کریں گےاسےدیانت داری سےقبول کریں گے۔

یاد رہے امریکی محکمہ خارجہ کے ترجمان نیڈ پرائس نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا تھا افغان تنازع کاکوئی فوجی حل نہیں، سیاسی حل ہی امن کا راستہ ہے، افغان مذاکرات میں امریکا فریق نہیں ، معاون کا کردار ادا کیا۔

امریکی محکمہ خارجہ کا کہنا تھا کہ بندوق کے زور پرحکومت کرنے والوں کو عالمی حمایت حاصل نہیں ہوگی ، طالبان، افغان حکومت میں تصفیہ ہی امن کا واحدراستہ ہے، دنیا افغانستان میں زبردستی کی حکومت قبول نہیں کرے گی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں