The news is by your side.

Advertisement

کرونا وائرس کا خطرہ، دفتر خارجہ نے قونصلر سروسز معطل کردیں

اسلام آباد : کرونا وائرس کے خطرے کے پیش نظر دفتر خارجہ نے قونصلر سروسز معطل کردیں، قونصلر سروسز پر یہ پابندی 18 مارچ سے 3 اپریل 2020 تک برقرار رہے گی۔

تفصیلات کے مطابق کرونا وائرس کے بڑھتے ہوئے خطرے کے پیش نظر وزارت خارجہ نے مختلف دستاویزات کی تصدیق کے لئے عوام کے قونصلر سروس آنے کا عمل روک دیا ہے۔

ترجمان دفتر خارجہ نے کہا کہ قونصلر سروسز پر یہ پابندی 18 مارچ سے 3 اپریل 2020 تک برقرار رہے گی، جس کے بعد صورتحال کا پھر جائزہ لے کر مستقبل کے حوالے سے اعلان کیا جائے گا۔ تاہم صرف ’پاورآف اٹارنی‘(مختار نامہ) کی تصدیق کرانے والے افراد کو رسائی کی اجازت بدستور رہے گی۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ عوام کی مشکلات کو مدنظر رکھتے ہوئے مختلف اسناد کی تصدیق وتوثیق کا عمل پاکستان پوسٹ، جیریز، لیپرڈ اور ٹی سی ایس جیسی کورئیر کمپنیوں کے ذریعے انجام دیا جائے گا، عوام اس طریقہ کار کو اختیار کرتے ہوئے اپنی دستاویزات وزارت خارجہ ارسال کرسکتے ہیں۔

وزارت خارجہ نے کورونا کے حوالے سے پیدا شدہ صورتحال میں ایک خصوصی کوآرڈینیشن سیل بھی قائم کر دیا ہے، جو اسپیشل سیکرٹری (ایڈمنسٹریشن) کی زیر نگرانی کام کرے گا، یہ سیل پاکستان میں قائم سفارت خانوں اور بیرون ملک قائم پاکستانی مشنز کے ساتھ رابطے میں رہے گا۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں