فیس بک سے کشمیری عوام کے حق میں مواد ہٹانے پر دفترخارجہ کا ردعمل -
The news is by your side.

Advertisement

فیس بک سے کشمیری عوام کے حق میں مواد ہٹانے پر دفترخارجہ کا ردعمل

اسلام آباد: سماجی رابطے کی ویب سائٹ سے کشمیری عوام کے حق میں مواد ہٹا دیا گیا، پاکستان نے شدید رد عمل میں کہا ہے فیس بک کو غیر جانبدار رہنا چاہیے۔

تفصیلات کے مطابق فیس بک کے بانی مارک زکر برگ اپنے ساتھ نریندر مودی کا عجیب و غریب سلوک بھول گئے یا پھر فیس بک انتظامیہ بھارتی اثر کا شکار ہو گئی، فیس بک سے کشمیریوں کے حق میں کی جانے والی تمام پوسٹس ہٹالی گئیں۔

دفتر خارجہ پاکستان کا فیس بک کے اس اقدام کو جانبدارانہ قرار دیتے ہوئے کہنا ہے کہ سوشل میڈیا پر اظہار رائے کا حق سب کو حاصل ہونا چاہئے، فیس بک پر عوام کی پوسٹ سے عالمی برادری کو سبق سیکھنا چاہئے۔

ترجمان دفتر خارجہ نے بھی ہفتہ وار بریفنگ میں مقبوضۃ کشمیر میں بھارتی مظالم پر بات کی، نفیس ذکریا نے واضح کر دیا پاکستان کشمیریوں کا معاملہ اقوام متحدہ سمیت ہر فورم پر اٹھاتا رہے گا۔

پاکستان نے حالیہ دنوں میں بھارتی فوج کے ہاتھوں ساٹھ کشمیریوں کی شہادت اور ایک ہزار سے زائد کشمیریوں کے زخمی ہونے کو بہیمانہ ظلم سے تعبیر کیا ہے۔

ترجمان نے بریفنگ کے دوران کہا کہ انھوں نے کہا کہ پاکستان مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں اور حریت قیادت کی نظر بندی کی مذمت کرتا ہے۔

ترجمان دفترخارجہ کا کہنا تھا کہ انڈونیشیا میں سزائے موت کے قیدی ذوالفقار علی کے مقدمہ سے آگاہ ہیں ، انڈونیشیا سے انصاف کے تقاضے پورے کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں