The news is by your side.

Advertisement

جانئے، وہ غذائیں جو آنکھوں کی حفاظت میں معاون ثابت ہوسکتی ہیں

انسان کی زندگی میں آنکھوں اور بینائی کا اہم کردار ہوتا ہے، آنکھیں ہی وہ ذریعہ ہیں، جس سے کرہ ارض کو دیکھا جاسکتا ہے، ہر کوئی چاہتا ہے کہ وہ آنکھوں کی اچھے طریقے سے حفاظت کرے، صرف اینٹی گلیئر گلاسز یا دھوپ میں سن گلاسز پہن لینا کافی نہیں بلکہ اچھی نظر کے لیے مناسب اور صحت بخش خوراک بھی بہت ضروری ہوتی ہیں۔

ہم آپ کو بتاتے ہیں کہ کن غذاؤں کے استعمال سے آپ کی آنکھوں کی حفاظت اور نظر میں بہتری ہوسکتی ہے۔

مچھلی کا استعمال

مچھلی کا استعمال آنکھوں کے لیے کافی مفید سمجھا جاتا ہے، مچھلیوں میں اومیگا تھری فیٹی ایسڈز ہوتے ہیں، جو آپ کی آنکھ کو خشک ہونے سے بچاتے ہیں اور آنکھ کے پردے کو خراب ہونے سے بچا کر نظر کو بہتر بناتے ہیں۔

انڈوں کا استعمال

انڈےخاص طور پر زردی لوٹئین اور زنک سے بھرپور ہوتی ہے، جو آنکھ کی صحت اور انہیں خراب ہونے سے بچانے میں مدد دیتے ہیں، اس لیے انڈوں کو اپنی روزمرہ خوراک کا حصہ بنائیں، ان سے آپ اپنی نظر کافی بہتر بنا سکتے ہیں۔

ہری سبزیاں
سبز گوبھی، پالک اور سلاد کے پتوں سمیت تمام ہی ہرے رنگ کی سبزیوں لوٹئین اور زیزانتھین کثرت سے پایا جاتا ہے جو آنکھ کے مختلف امراض سے بچانے کے لیے بہت اہم ہیں۔

دودھ کی مصنوعات
دودھ کی مصنوعات وٹامن اے اور دوسرے کمپاؤنڈز سے بھرپور ہوتی ہیں، جو مجموعی صحت کے لیے اور آپ کی نظر کے لیے بھی بہترین ہوتی ہیں، پھر دودھ، دہی میں زنک بھی پایا جاتا ہے جو ایک اہم منرل ہے اور جسم کے ساتھ ساتھ آنکھ کے لیے بہت مفید ہے۔ زنک کی کمی سے رات کے وقت اندھے پن کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے، اس لیے دودھ اور اس کی مصنوعات کا استعمال اپنا روزمرہ معمول بنائیں۔

گاجر

گاجریں کھانے سے نظر تیز ہوتی ہے،کیونکہ گاجروں میں بیٹا،کیروٹین نامی ایک کمپاؤنڈ بڑی مقدار میں پایا جاتا ہے، جو استعمال کے بعد وٹامن اے میں تبدیل ہو جاتا ہے، یہ وٹامن آنکھوں اور نظر کے لیے بہت مفید ہے۔

شکر قندی
شکر قندی میں بھی گاجروں کی طرح بھرپور بیٹا، کیروٹین ہوتا ہے، یعنی یہ بھی وٹامن اے حاصل کرنے کا بہترین ذریعہ ہیں، شکر قندیوں کا مستقل استعمال بھی نظر کو بہتر بنانے اور آنکھوں کی صحت کے لیے مفید ہے۔

ترشی پھل

کینو، موسمیاں، چکوترے اور ایسے ہی دیگر ترنجی پھل وٹامن سی سے مالا مال ہوتے ہیں، جو قوتِ مدافعت کو بڑھانے کے لیے اہم ترین چیز ہے۔ ان میں فلاوونائڈ بھی ہوتے ہیں کہ جو آنکھوں کو موتیے جیسے خطرناک امراض سے بچاتے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں