The news is by your side.

Advertisement

4 ماہ میں براہ راست غیرملکی سرمایہ میں ریکارڈ اضافہ

اسلام آباد : غیرملکی سرمایہ کاروں کا پاکستان پر بڑھتا ہوا اعتماد بحال ہوگیا ، رواں مالی سال کے پہلے چار ماہ میں پاکستان میں براہ راست غیرملکی سرمایہ کاری میں گزشتہ برس کے مقابلے میں دوسو اڑتیس فیصد اضافہ ہوا ہے۔

تفصیلات کے مطابق اسٹیٹ بینک کے اعداد و شمار میں بتایا گیا کہ جولائی تا اکتوبر براہ راست غیرملکی سرمایہ کاری کا حجم پینسٹھ کروڑ ڈالر رہا، جو گزشتہ سال اسی عرصے میں انیس کروڑانیس لاکھ ڈالرتھا، غیرملکی سرمایہ کاری میں نمایاں اضافے کے باعث پاور سیکٹرمیں خاطر خواہ سرمایہ کاری دیکھنے میں آئی۔

اسٹیٹ بینک کا کہنا ہے اکتوبرمیں غیرملکی سرمایہ کاری کاحجم دس کروڑاناسی لاکھ ڈالر رہا جبکہ اسٹاک مارکیٹ میں غیرملکی سرمایہ کاری میں ایک سوچھ فیصد کا اضافہ ریکارڈ کیاگیا۔

اعداد و شمار کے مطابق جولائی تااکتوبر پورٹ فولیو سرمایہ کاری کاحجم ایک کروڑ چھپن لاکھ ڈالر رہا، سب سے زیادہ سرمایہ کاری ناروے سے آئی جبکہ دوسرے نمبر پر چین ہے۔

مرکزی بینک کا کہنا تھا کہ سب سےزیادہ سرمایہ کاری پاورسیکٹرمیں آئی، پاورسیکٹرمیں تین کروڑبارہ لاکھ ڈالرکی سرمایہ کاری آئی، گزشتہ مالی سال پاور سیکٹر سے سرمائے کا انخلا دیکھا گیا تھا۔

یاد رہے گزشتہ ہفتے ملکی زرمبادلہ کے مجموعی ذخائر میں1کروڑ55لاکھ ڈالرز کی کمی ہوئی تھی تاہم مرکزی بینک کے ذخائر4کروڑ ڈالر کا اضافہ ہوا تھا ۔ اسٹیٹ بینک کے مطابق 8 نومبر کو ختم ہونے والے ہفتے میں ملکی زرمبادلہ کے ذخائر15 ارب 50 کروڑ 24 لاکھ ڈالرز کی سطح پر رہے۔

مرکزی بینک کے ذخائر چار کروڑ ڈالر اضافے سے8ارب39کروڑ73لاکھ ڈالرز جبکہ کمرشل بینکوں کے ذخائر 5 کروڑ 52 لاکھ ڈالرز کمی سے 7 ارب 10 کروڑ 51 لاکھ ڈالرز کی سطح پر رہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں