کشمیری صحافی کے قتل کی تحقیقات کروائی جائے: دفتر خارجہ -
The news is by your side.

Advertisement

کشمیری صحافی کے قتل کی تحقیقات کروائی جائے: دفتر خارجہ



اسلام آباد: دفتر خارجہ کا کہنا ہے کہ کشمیری صحافی کے قتل کی تحقیقات کروائی جائے، بھارت انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں اجاگر ہونے پر گھبراہٹ کا شکار ہے۔

تفصیلات کے مطابق ترجمان دفتر خارجہ ڈاکٹر فیصل نے ہفتہ وار بریفنگ دی۔

ترجمان دفتر خارجہ نے سابق سفیر جمشید مارکر کے انتقال کی تصدیق کرتے ہوئے ان کے اور ممتاز مزاح نگار مشتاق احمد یوسفی کے انتقال پر اظہار افسوس کیا۔

ترجمان نے کشمیری صحافی شجاعت بخاری کے قتل کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ شجاعت بخاری کا قتل بھارتی بربریت کی تازہ مثال ہے۔ بھارت نے شجاعت بخاری کے قتل کا سیاسی استعمال کیا۔

انہوں نے کہا کہ بھارت مقبوضہ کشمیر میں صحافی کے قتل کی تحقیقات کرے اور قاتلوں کو انصاف کے کٹہرے میں لائے۔

ترجمان دفتر خارجہ کا کہنا تھا کہ انسانی حقوق کمیشن کی رپورٹ کا خیر مقدم کرتے ہیں۔ مقبوضہ کشمیر میں پیلٹ گن کا استعمال افسوس ناک ہے۔ عالمی تنظیمیں بھارتی مظالم رکوانے کے لیے کردار ادا کریں۔

بریفنگ میں کہا گیا کہ بھارت انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں اجاگر ہونے پر گھبراہٹ کا شکار ہے۔ کلبھوشن پر بھارت کے صحافیوں کو مدعو کیا اور آزادانہ ماحول دیا۔ انسانی حقوق کی غیر جانبدارانہ انکوائری کی پیشکش کی تاہم بھارت مکر گیا۔

ترجمان نے کہا کہ بھارتی افواج نے عید کے دنوں میں بھی مظالم جاری رکھے۔ گزشتہ 2 ہفتے میں 16 کشمیری شہید کیے گئے۔ حریت رہنما علی گیلانی کو نماز عید بھی ادا نہیں کرنے دی گئی۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں