The news is by your side.

Advertisement

جموں و کشمیر پر پاکستان کے اصولی مؤقف میں کوئی تبدیلی نہیں آئی: دفتر خارجہ

اسلام آباد: دفتر خارجہ کے ترجمان نے کہا ہے کہ جموں و کشمیر پر پاکستان کے اصولی مؤقف میں کوئی تبدیلی نہیں آئی۔

تفصیلات کے مطابق کوٹلی میں یوم یک جہتی کے جلسے سے وزیر اعظم عمران خان کے خطاب کے پس منظر میں دفتر خارجہ نے ایک بیان میں کہا ہے کہ پاکستان کے جموں و کشمیر پر مؤقف میں کوئی تبدیلی نہیں آئی۔

ترجمان کا کہنا تھا پاکستان کا مؤقف سلامتی کونسل کی قراردادوں کے مطابق ہے، وزیر اعظم کا خطاب کشمیریوں کے حق خود ارادیت کے لیے عزم کا اعادہ ہے۔

دفتر خارجہ کے ترجمان نے کہا وزیر اعظم کی گفتگو پاکستان کے دیرینہ مؤقف کی تائید ہے، وزیر اعظم نے بار بار مقبوضہ کشمیر سے یو این قراردادوں کی بات کی، انھوں نے قراردادوں پر عمل درآمد کی ضرورت پر زور دیا۔

کشمیریوں‌ کی تکالیف کا احساس ہے، کشمیر کی آزادی تک آواز بلند کروں‌ گا، عمران خان

ترجمان کے مطابق پاکستان غیر جانب دارانہ رائے شماری کے ذریعے اس تنازعے کا حل چاہتا ہے، کشمیریوں کی حق خود ارادیت پر پاکستان کا عزم اور مؤقف دو ٹوک ہے، رائے شماری کا وعدہ یو این قراردادوں میں شامل ہے۔

واضح رہے کہ کوٹلی میں وزیر اعظم عمران خان نے یوم یکجہتی کشمیر پر عوامی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہا تھا کہ کشمیریوں کو وہ حق دیں گے کہ وہ خود فیصلہ کریں کہ پاکستان کے ساتھ رہیں گے یا آزاد، سارا پاکستان مقبوضہ کشمیر کے عوام کے ساتھ کھڑا ہے۔

وزیر اعظم نے کہا اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق کشمیر کے لوگوں کو حق ملنا تھا، کشمیری عوام کو ان کی مرضی کے مطابق حق دیا جانا تھا مگر یہ وعدہ اب تک پورا نہ ہو سکا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں