The news is by your side.

Advertisement

بھارتی ڈپٹی ہائی کمشنر کی طلبی، بلا اشتعال فائرنگ پراحتجاج

اسلام آباد : بھارتی ڈپٹی ہائی کمشنر کو دفتر خارجہ طلب کر کے بھارتی فوج کی جانب سے لائن آف کنٹرول پر سیز فائر کی خلاف ورزی کی مذمت کرتے ہوئے سخت احتجاج کیا گیا۔

ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق آج بھارتی ڈپٹی ہائی کمشنر کو دفتر خارجہ طلب کر کے لائن آف کنٹرول پر سیز فائر کی مسلسل خلاف ورزی کرنے اور مقامی شہری آبادیوں کو نشانہ بنانے پر سخت احتجاج کیا گیا۔

ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق 27 اگست کو بھارتی بلا اشتعال فائرنگ سے خاتون سمیت 3 شہری شہید ہوئے گئے تھے بھارتی مارٹر گولے لگنے سے فتح پور گاؤں میں 2 افراد زخمی ہوگئے تھے جس پر بھارتی ڈپٹی ہائی کمشنر کو طلب کر کے احتجاج ریکارڈ کروایا گیا۔

ترجمان دفتر خارجہ نے کہا کہ بھارت نے رواں سال اب تک 600 بار سیز فائر کی خلاف ورزی کی اور اب تک بھارتی فوج کی بلا اشتعال فائرنگ سے 28 معصوم شہری شہید جب کہ 113 زخمی ہوئے جب کہ کئی شہریوں کے گھر تباہ ہو گئے۔

ڈی جی ساؤتھ ایشیا ڈاکٹرمحمد فیصل نے کہا کہ بھارتی فوج شہری آبادیوں کونشانہ بنارہی ہے اور مسلسل سیز فائر کی خلاف ورزی میں مصروف ہے جس پر متنبہ کرتے ہیں کہ بھارت سیزفائر معاہدے کی پابندی کرے اور مقامی آبادی کو نشانہ بنانے سے گریز کرے۔


اگرآپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اوراگرآپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس  وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں