The news is by your side.

Advertisement

جناح ہاؤس کا بھارت کی تحویل میں جانا قبول نہیں کریں گے: دفتر خارجہ

اسلام آباد: دفتر خارجہ کا کہنا ہے کہ بھارت میں جناح ہاؤس پر پاکستان کا دعویٰ بہت پرانا ہے، جناح ہاؤس کی بھارت میں تحویل قبول نہیں کریں گے۔ بھارت نے پاکستان کا دعویٰ تسلیم کیا ہوا ہے۔

تفصیلات کے مطابق ترجمان دفتر خارجہ ڈاکٹر محمد فیصل نے ہفتہ وار بریفنگ کے دوران کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم کا سلسلہ جاری ہے، کشمیری عوام کی نسل کشی کی بھرپور مذمت کرتے ہیں۔ بھارت طاقت سے مظلوم کشمیریوں کی آواز دبا نہیں سکتا۔

ترجمان نے کہا کہ پچھلے ماہ مقبوضہ کشمیر میں 24 کشمیریوں کو شہید کیا گیا، انسداد دہشت گردی کے نام پربھارتی فوج کی بربریت جاری ہے۔ بھارتی فوج شہریوں کے چہروں اور گردنوں کو نشانہ بنا رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ بھارت حق خود ارادی کی آواز دبانے کی کوشش کر رہا ہے، کشمیریوں کے خلاف پیلٹ گنز اور طاقت کا استعمال کیا جارہا ہے۔ سرحد پر بے گناہ شہریوں پر بمباری کی جارہی ہے۔ بھارت مسئلہ کشمیر سے توجہ ہٹانے کے لیے لائن آف کنٹرول پر فائرنگ کرتا ہے۔

دفتر خارجہ نے کہا کہ چین، افغانستان اور پاکستان کے وزارت خارجہ کے سطح پر مذاکرات ہوئے۔ تینوں فریقین نے باہمی تعاون پر اتفاق کیا، وزیر خارجہ نے افغان صدر اور چیف ایگزیکٹو سے ملاقاتیں کیں اور افغان قیادت کے مذاکرات کی حمایت کی۔ پاکستان نے افغان مفاہمتی عمل کے لیے اپنا کردار ادا کیا۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ کہ پاکستان کے کردار کی ہر جگہ پر تعریف کی گئی۔ پاکستان، چین اور افغانستان کے درمیان مشاورتی اجلاس بھی ہوا۔ تینوں ممالک نے دہشت گردی کے خلاف مل کر کام کرنے پر اتفاق کیا۔ تینوں فریقین نے ون بیلٹ ون روڈ سے فوائد حاصل کرنے پر اتفاق کیا۔

انہوں نے کہا کہ کولمبو میں پاکستانی قیدیوں کی بھوک ہڑتال کی خبر پر دورہ کیا، قیدیوں سے ملاقات اور مذاکرات کیے۔ 36 پاکستانی سری لنکا کی ایک جیل میں قید ہیں۔ مشن قانونی معاونت اور خوراک فراہم کر رہی ہے۔

دفتر خٓرجہ کا کہنا تھا کہ ابو ظہبی میں ہونے والے طالبان کے ساتھ مذاکرات میں پاکستان نے تعاون کیا، افغان مسئلے کا حل افغان قیادت کے ساتھ مل کر چاہتے ہیں۔ وزیر خارجہ نے افغان قیادت کو پاکستان کے تعاون کا یقین دلایا۔

ترجمان نے کہا کہ امریکا اور افغان قیادت کے طالبان سے مذاکرات کی حمایت کرتے ہیں، امید ہے کہ مذاکرات افغان مسئلے کے پرامن حل پر منتج ہوں گے، پاکستان افغانستان میں قیام امن کے لیے ہر ممکن کردار ادا کرے گا۔

بھارت میں جناح ہاؤس کے بارے میں انہوں نے کہا کہ بھارت میں جناح ہاؤس پر پاکستان کا دعویٰ بہت پرانا ہے، جناح ہاؤس کی بھارت میں تحویل قبول نہیں کریں گے۔ بھارت نے پاکستان کا دعویٰ تسلیم کیا ہوا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں