The news is by your side.

Advertisement

کلبھوشن کی گرفتاری ثبوت ہے کہ دہشت گردی کون کر رہا ہے: دفتر خارجہ

اسلام آباد: ترجمان دفتر خارجہ کا کہنا ہے کہ کلبھوشن یادیو کی گرفتاری ثبوت ہے کہ دہشت گردی کون کر رہا ہے۔ بھارت سکھ یاتریوں کے دورے پر تنازع پیدا کر رہا ہے۔

تفصیلات کے مطابق ترجمان دفتر خارجہ ڈاکٹر فیصل نے ہفتہ وار بریفنگ میں کہا کہ پاکستان کی خارجہ پالیسی میں کوئی کنفیوژن نہیں۔ ہماری خارجہ پالیسی کی بنیاد ہمارے اپنے ملکی مفادات ہیں۔

ترجمان نے بتایا کہ وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے سعودی عرب کا بھی دورہ کیا۔ دورے کے دوران وزیر اعظم نے گلف شیلڈ مشقوں کی اختتامی تقریب میں شرکت کی جبکہ سعودی فرمانروا شاہ سلمان سے بھی ملاقات کی۔

دفتر خارجہ کا کہنا تھا کہ چینی شہریوں کا پاکستان آنا اور کام کرناخوش آئند ہے۔ پاک چین اقتصادی راہداری پر کام کرنے والے چینی شہریوں کے مکمل کوائف ہیں۔

ترجمان نے کہا کہ بھارت کے سرجیکل اسٹرائیکس دعوے کی تردید کر چکے ہیں۔ ’بار بار جھوٹ کو دہرانے سے جھوٹ سچ نہیں بن جاتا۔ کلبھوشن کی گرفتاری ثبوت ہے کون دہشت گردی کر رہا ہے‘۔

انہوں نے بتایا کہ سکھ یاتریوں کو ملنے سے روکنے کے الزامات بے بنیاد ہیں۔ بھارتی وزارت خارجہ نے حقائق کو مسخ کر کے پیش کیا۔ بھارتی ہائی کمشنر کو بیساکھی تقریب میں شرکت کی دعوت بھی دی گئی تھی۔ وزارت خارجہ نے دعوت نامہ ہائی کمشنر کو بھجوا دیا تھا جس کے بعد بھارتی ہائی کمشنر کو سفری اجازت بھی دے دی گئی تھی۔

ترجمان نے صورتحال کے بارے میں تفصیلات سے آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ سکھ یاتریوں نے بھارت میں بابا گرو نانک کی فلم پر غصے کا اظہار کیا۔ صورتحال کے پیش نظر بھارتی ہائی کمیشن کو رویے سے آگاہ کیا۔ بھارتی ہائی کمیشن نے صورتحال کے پیش نظر دورہ منسوخ کیا۔

انہوں نے کہا کہ بھارت سکھ یاتریوں کے دورے پر تنازع پیدا کر رہا ہے اور دو طرفہ تعلقات کا ماحول خراب کر رہا ہے۔ ’بھارتی رویے کی شدید مذمت کرتے ہیں، مذہبی مقامات کے پروٹوکول کی خلاف ورزی کا الزام مضحکہ خیز ہے‘۔

ترجمان نے مزید کہا کہ بھارت نے خود پاکستانی زائرین کو ویزے جاری نہیں کیے۔ بھارت نے 2017 سے سکھ اور ہندو یاتریوں کے 3 دورے روکے ہیں۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں