The news is by your side.

Advertisement

سابق اداکارہ کا مشہور ڈائریکٹر رومن پولانسکی پر جنسی تشدد کا الزام

پیرس : فرانس کی سابق اداکارہ ویلنٹائن مونیئر نے مشہور فلمساز رومن پولانسکی پر 1975 میں جنسی تشدد اور ریپ کرنے کا الزام عائد کردیا، ویلنٹائن مونیئر نے کئی سال قبل اداکاری کو خیرباد کہہ دیا تھا اور اب وہ فوٹوگرافر کے طور پر کام کررہی ہیں۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق ویلنٹائن مونیئر نے رومن پولانسکی پر الزام لگاتے ہوئے کہا کہ فلم ساز نے انہیں 1975 میں اپنے بنگلے میں ریپ اور جنسی تشدد کا نشانہ بنایا، اس وقت وہ صرف 18 برس کی تھی۔

کھلے خط میں سابق اداکارہ نے لکھا کہ رومن نے انہیں زبردستی ایک دوا کھلانے کی کوشش کی اور جنسی تشدد بھی کیا، اس کے کچھ دیر بعد ہی آنسو بہاتے ہوئے معافی مانگی اور وعدہ لیا کہ وہ کبھی کسی کو اس واقعے کے بارے میں نہیں بتائیں۔

انہوں نے لکھا کہ مجھے لگا میں شاید مرنے والی ہوں۔

ویلنٹائن نے بتایا کہ وہ مجھے اس وقت تک مارتے رہے جب تک میں ہمت نہ ہار گئی، اس کے بعد انہوں نے میرا ریپ کیا۔

دوسری جانب 86 سالہ فلم ساز رومن پولانسکی نے ان تمام الزامات کو بے بنیاد ٹھہراتے ہوئے سابق اداکارہ کے خلاف مقدمہ دائر کرنے کی دھمکی دے دی۔

آسکر ایوارڈ یافتہ فلم ساز کے وکیل کے مطابق رومن ریپ کے ان الزامات پر سخت ترین ایکشن لے گیں۔

بی بی سی کی رپورٹ کے مطابق رومن پولانسکی پر 1978 میں ایک تیرہ سالہ لڑکی سے غیر قانونی جنسی تعلق قائم کرنے کا الزام بھی عائد کیا گیا تھا لیکن وہ سزا سنائے جانے سے قبل ہی امریکا چھوڑ کر فرانس چلے گئے تھے۔

سابق اداکارہ ویلنٹائن مونیئر کا سپورٹ کرتے ہوئے اڈیل ہینیل نے اپنے بیان میں کہا کہ میں ویلنٹائن کی حمایت کرتی ہوں اور ہر حال میں ان کا ساتھ دوں گی، وہ سچ کہہ رہی ہیں اور مجھے ان پر یقین ہے، چاہے سامنے والا کتنا بھی طاقتور کیوں نہ ہو سچ کی جیت ہوگی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں