The news is by your side.

Advertisement

حکومت کو عدالت میں مدت ملازمت میں توسیع پر ٹھوس وجوہات کا مؤقف اپنانا ہوگا،عرفان قادر

اسلام آباد : سابق اٹارنی جنرل عرفان قادر کا کہنا ہے کہ عدالت چاہتی ہے معاملے پر غلطی کا ازالہ ہو،معاملے پر پورا کردار حکومت کا ہے، آرمی چیف کا نہیں ، حکومت کو مدت ملازمت میں توسیع پر ٹھوس وجوہات کا مؤقف اپنانا ہوگا۔

تفصیلات کے مطابق سابق اٹارنی جنرل عرفان قادر نے آرمی چیف کی مدت ملازمت کیس سے متعلق کہا کہ عدالت چاہتی ہے معاملے پر غلطی کا ازالہ ہو، موجودہ اٹارنی جنرل نوٹس سے پہلے ہی تمام دستاویز لیکر گئے ، معاملے پر پورا کردار حکومت کا ہے، آرمی چیف کا نہیں۔

عرفان قادر کا کہنا تھا کہ حکومت کو موقع دیاگیا ہے کہ یہ فیصلہ کس طرح سے ٹھیک ہے، حکومت کو عدالت میں بتانا ہے کہ مدت میں توسیع کی وجہ کیا ہے، میرا نہیں خیال معاملے پر سپریم کورٹ فیس سیونگ کرنےجارہاہے، حکومت نے مؤقف اپنایا کہ علاقائی سیکیورٹی پر توسیع کا فیصلہ کیاگیا، حکومت کو مدت ملازمت میں توسیع پر ٹھوس وجوہات کامؤقف اپنانا ہوگا۔

سابق اٹارنی جنرل نے کہا ہر بات کا قانون میں لکھا ہونا ضروری نہیں ہے، مثال کے طورپرکسی سرکاری ملازم کو کھاناکھانا ہو تو شرائط قانون میں نہیں، سپریم کورٹ معاملے پر تاخیر نہیں کرے گی کیونکہ سپریم کورٹ بھی چاہتی ہے کہ معاملہ آج ہی حل ہوجائے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ حکومت کو آج ہی اس معاملے پر سنجیدگی دکھانا ہوگی ، سپریم کورٹ نے دستاویز طلب کی ہیں ، کوئی روایت بن گئی ہےتوسپریم کورٹ  اس سےنہیں انحراف چاہتی ، اٹارنی جنرل کو عدالت میں ٹھوس مؤقف اپناناچاہیے، اٹارنی جنرل کا کام عدالت کی درست معاونت کرنا ہوتاہے۔

عدالت چاہتی ہے کہ ہمیں مداخلت کیلئے مجبور نہ کیاجائے، سابق وزیرقانون خالدرانجھا


دوسری جانب سابق وزیرقانون خالدرانجھا نے کہا کہ عدالت نے کہا ہم معاملےمیں مداخلت نہیں کرنا چاہتے عدالت چاہتی ہے کہ ہمیں مداخلت کیلئے مجبور نہ کیاجائے اور حکومت اپنا کام قانون کے مطابق کرے، اٹارنی جنرل وفاقی حکومت نہیں بلکہ پاکستان کےدفاع کیلئے ہوتاہے۔

خیال رہے سپریم کورٹ میں آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع کیس کی سماعت جاری ہے، چیف جسٹس نے جنرل کیانی کی مدت ملازمت میں توسیع اور جنرل راحیل شریف کی ریٹائرمنٹ کے کاغذات منگوالئے اور کہا بتایاجائے راحیل شریف نے اپنا عہدہ کیسے چھوڑا؟

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں