سابق چیف جسٹس انور ظہیر جمالی کے دور کے اہم فیصلے -
The news is by your side.

Advertisement

سابق چیف جسٹس انور ظہیر جمالی کے دور کے اہم فیصلے

چیف جسٹس انور ظہیر جمالی آج اپنے عہدے سے ریٹائر ہوگئے۔ ان کے دور میں سپریم کورٹ میں کون کون سے اہم کیسوں کی سماعت ہوئی، آئیے اس پر ایک نظر ڈالتے ہیں۔

ایک سال 2 مہینے اور 21 دن تک چیف جسٹس آف پاکستان کا عہدہ سنبھالنے والے چیف جسٹس انور ظہیر جمالی نے ایف آئی اے میں پولیس افسروں کی ڈیپوٹیشن، نیب میں افسروں کی ڈیپوٹیشن، نیب رقوم کی رضاکارانہ واپسی، اور الیکشن کمیشن کی غیر فعالیت سمیت 20 اہم معاملات پر از خود نوٹسز لیے۔

سبکدوش ہونے والے چیف جسٹس نے 16 دہشت گردوں کی پھانسی کے خلاف اپیلیں خارج کیں۔

انہوں نے سابق صدر پرویز مشرف کا نام ای سی ایل سے نکالنے سمیت خواجہ آصف کے حلقے میں دوبارہ انتخابات کی درخواست مسترد کی۔

انور ظہیر جمالی نے تلور کے شکار پر پابندی ختم کر کے کیس کو از سر نو سننے کا فیصلہ دیا۔ انہوں نے بلدیاتی انتخابات کو مرحلہ وار کروانے کا حکم بھی دیا۔

جسٹس انور ظہیر جمالی نے 15 مارچ 2017 کو ملک میں چھٹی مردم شماری کروانے کا اہم ترین فیصلہ بھی سنایا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں