The news is by your side.

Advertisement

سابق فاسٹ بولر پُراسرار بیماری میں مبتلا، چلنے پھرنے سے محروم

کراچی: قومی ٹیم کے سابق فاسٹ بولر احتشام الدین چلنے پھرنے سے محروم ہوگئے، ڈاکٹرز ان کی پیچیدہ بیماری کی تشخیص کرنے سے قاصر ہیں۔

تفصیلات کے مطابق 70 سالہ سابق ٹیسٹ فاسٹ بولر احتشام الدین نے پانچ ٹیسٹ میں پاکستان کی نمائندگی کی اور 16 وکٹیں حاصل کیں، ان کی بہترین بولنگ 47 رنز کے عوض پانچ وکٹیں تھیں۔

احتشام الدین نے یہ کارکردگی 1979-80 میں بھارت کے خلاف کانپور ٹیسٹ میں انجام دی، اسی ٹیسٹ کی اننگز میں سکندر بخت نے 56 رنز دے کر پانچ وکٹیں لی تھیں، یہ دوسرا پیئر تھا جس نے ایک اننگز میں 5، 5 وکٹیں لیں۔

کرکٹ سے ریٹائرمنٹ کے بعد احتشام الدین کوچنگ سے وابستہ رہے لیکن اب وہ کسی سہارے کے بغیر اٹھ بھی نہیں سکتے نہ ہی قدم اٹھا سکتے ہیں۔

سابق فاسٹ بولر کا کہنا ہے کہ 2010 میں لاہور کی ٹیم کے کوچ کی حیثیت سے کراچی میں تھے کہ میچ کے دوران گراؤنڈ میں طبیعت خراب ہوئی تو بیٹھے بیٹھے گر گئے، ڈاکٹرز نے مرگی کا دورہ قرار دیا لیکن اس کے بعد سے ان کی صحت گرتی گئی۔

ان کا کہنا ہے کہ ڈاکٹر بیماری کی تشخیص نہ کرسکے اور اب چلنے پھرنے کے قابل بھی نہیں ہیں۔

احتشام الدین کیئر ٹیکر کے ساتھ گھر میں اکیلے رہتے ہیں، ان کی اہلیہ کا انتقال ہوچکا ہے جبکہ اکلوتی بیٹی قومی سوئمر عیشا خان شادی کے بعد انگلینڈ میں مقیم ہیں۔

سابق فاسٹ بولر نے کہا کہ انہیں کوئی مسئلہ نہیں ہے بس چل نہیں سکتے، شاید اللہ کو ایسا ہی منظور ہے یہ اللہ کی رضا ہے، اگر انسان کے بس میں سب کچھ ہو تو انسان کو تو کچھ بھی نہ ہو تاہم اچھا وقت گزر رہا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں