The news is by your side.

Advertisement

سابق ڈی جی ایل ڈی اے کی گرفتاری: نیب اورپنجاب حکومت آمنے سامنے

لاہور : نیب نے احد چیمہ کی گرفتاری پر ترجمان پنجاب حکومت کی جانب سے  عائد الزامات مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ ملزم نے آشیانہ اقبال اسکیم کا14ارب روپے کا ٹھیکہ منظور نظرافراد کو دیا۔

تفصیلات کے مطابق قومی احتساب بیورو لاہور کی جانب سے سابق ڈی جی ایل ڈی اے احد چیمہ کی گرفتاری پر پنجاب حکومت کے ترجمان نے کہا ہے کہ احد چیمہ کی گرفتاری ادارے کے اختیارات سے تجاوز ہے۔

ملک احمد خان کا کہنا ہے کہ ایسی سیکڑوں مثالیں موجود ہیں کہ سمن پرحاضرنہ ہونیوالوں کو نیب نے گرفتار نہیں کیا، ان کی گرفتاری فرض شناس افسر سے زیادتی کے مترادف ہے۔

ترجمان پنجاب حکومت کا مزید کہنا تھا کہ سرکاری افسرکی ضابطہ کار سے ہٹ کر گرفتاری سے انتظامی مشینری میں بےچینی پائی جاتی ہے، سرکاری مشینری میں اضطراب سے عوامی امور متاثر ہوسکتے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ نیب کے کسی اقدام سے کسی فرد کی تذلیل یا تضحیک کا تاثرنہیں ملنا چاہیے، پنجاب حکومت کا ترقی کا سفرجاری رہے گا۔

دوسری جانب پنجاب حکومت کے الزامات کو مسترد کرتے ہوئے ترجمان نیب کا کہنا ہے کہ احد چیمہ پر اختیارات کا ناجائز استعمال اورکرپشن کا الزام ہے۔

ملزم نے آشیانہ اقبال ہاؤسنگ اسکیم کا 14 ارب روپے کا ٹھیکہ منظور نظرافراد کو دیا، آشیانہ اقبال اسکیم کی 32 کینال اراضی پیراگون سٹی کو غیرقانونی طور پر دی گئی تھی۔

ترجمان نیب نے کہا کہ احد چیمہ کو انکوائری کے دوران صفائی کا پورا موقع دیا گیا لیکن انکوائری کے دوران وہ الزامات کا دفاع نہیں کرسکے، ترجمان نے واضح کیا کہ احد چیمہ کی گرفتاری ملکی لوٹی ہوئی دولت واپس لینے کیلئے کی گئی ہے۔

علاوہ ازیں سابق ڈی جی ایل ڈی اے کی گرفتاری کی خبر سن کر ڈی ایم جی افسران اکٹھے ہوگئے، افسران نے احد چیمہ کی گرفتاری کو غیرقانونی قرار دے دیا۔


مزید پڑھیں: آشیانہ ہاؤسنگ اسکیم میں بدعنوانی، سابق ڈی جی ایل ڈی اے گرفتار


ڈی ایم جی افسران نے وزیراعلیٰ پنجاب شہبازشریف سے فوری طور پر رابطہ کرکے اپنے خدشات سے آگاہ کیا، ذرائع کے مطابق مذکورہ افسران کو وزیراعلیٰ کی جانب سے پیغام دیا گیا ہے کہ احدچیمہ کی رہائی جلد کرالی جائے گی۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔ 

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں