بدعنوانی کا مقدمہ: ملائیشیا کے سابق وزیراعظم گرفتار، فرد جرم عائد ہونے کا امکان
The news is by your side.

Advertisement

بدعنوانی کا مقدمہ: ملائیشیا کے سابق وزیراعظم گرفتار، فرد جرم عائد ہونے کا امکان

کوالالمپور: بدعنوانی کے مقدمے میں ملوث ملائیشیا کے سابق وزیر اعظم نجیب رزاق کو گرفتار کرلیا گیا، ان پر فرد جرم عائد کی جائے گی۔

تفصیلات کے مطابق ملائیشیا کے سابق وزیراعظم نجیب زراق کو کرپشن کیس میں گرفتار کیا گیا ہے، انہیں آج عدالت میں پیش کیا جائے گا جہاں ان پر فرد جرم عائد ہوسکتی ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق رزاق پر ملکی خزانے سے تقریباً 628 ملین ڈاکر کے کرپشن کا الزام ہے جس کے تحت انہیں مقدمے کا سامنا ہے۔

ملائیشیا کے سابق وزیر اعظم پر طاقت کے ناجائز استعمال سميت رقوم کی ہيرا پھيری کے 7 مختلف مقدمات کا بھی سامنا ہے، انہیں آج 20 ستمبر بروز جمعرات کو عدالت ميں پيش کيا جائے گا۔

اس سے قبل ملائیشیا کے سابق وزیر اعظم نجیب رزاق کو رواں سال 3 جون کو کرپشن کے الزام میں گرفتار کیا گیا تھا، بعد ازاں رہائی مل گئی تھی۔

کرپشن کے الزامات، ملائیشیا کے سابق وزیر اعظم نجیب رزاق گرفتار

خیال رہے کہ مہاتیر محمد نے منصبِ وزارت عظمیٰ سنبھالتے ہی نجیب رزاق کے خلاف مبینہ کرپشن کے الزامات کی تفتیش کرانے کا حکم جاری کیا تھا۔

اس دوران اُن کی رہائش گاہ کے علاوہ مختلف ٹھکانوں پر پولیس نے چھاپے مار کر کئی قیمتی اشیاء اپنے قبضے میں لے لی تھیں، تاہم اب عدالت کی جانب سے ان پر فرد جرم عائد کی جائے گی۔

خیال ہے کہ نجیب رزاق کے خلاف چھاپوں کے دوران 273 ملین ڈالرز برآمد کیے گئے تھے، جن میں 12 ہزار سے زائد زیورات، 423 مہنگی گھڑیاں، مشہور برانڈ کے 234 چشمے اور 567 ہینڈ بیگز ہیں جو سابق وزیر اعظم اور ان کی اہلیہ روسماء منصور کے زیر استعمال تھے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں