The news is by your side.

Advertisement

ن لیگ کے سابق ایم این اے غفار ڈوگر گرفتار

ملتان: اینٹی کرپشن ڈیپارٹمنٹ نے مسلم لیگ ن کے سابق ایم این اے ملک عبد الغفار ڈوگر کو گرفتار کر لیا۔

تفصیلات کے مطابق اینٹی کرپشن حکام نے ایک کارروائی میں آج ملتان میں سابق ن لیگی ایم این اے عبدالغفار ڈوگر کو حراست میں لے لیا۔

حکام کا کہنا ہے کہ غفار ڈوگر پر جعل سازی اور فراڈ سے اراضی کے دستاویزات بنانے کے الزامات ہیں، غفار ڈوگر کی جعل سازی کی وجہ سے حکومتی خزانے اور نجی بینک کو نقصان اٹھانا پڑا تھا۔

ذرایع کا کہنا ہے کہ ان کے خلاف انکوائری محمد بشیر نامی شہری کی درخواست پر کی گئی ہے۔

لیگی ایم پی اے کے خلاف اسسٹنٹ کمشنر کے اغوا کا مقدمہ درج

اینٹی کرپشن کے مطابق عبدالغفار ڈوگر کے خلاف مقدمہ بھی درج کر لیا گیا ہے، جس میں دھوکا دہی، سرکاری خزانے کو نقصان پہنچانے کی دفعات شامل کی گئی ہیں، مقدمے میں جعلی دستاویزات کی تیاری کی دفعات بھی شامل ہیں۔

ادھر لیگی رہنماؤں رانا ثنا اللہ اور عطا تارڑ نے غفار ڈوگر کی گرفتاری کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ اینٹی کرپشن نے لیگی رہنما کے گھر پر چھاپا مار کر انھیں گرفتار کیا اور چادر اور چاردیواری کا تقدس پامال کیا گیا۔

رانا ثنا نے کہا کہ ڈوگر پر 20 سال قبل خریدے گئے مکان کا انتقال درست نہ ہونے کا الزام ہے، ڈی جی اینٹی کرپشن پنجاب کو اس پر شرم آنی چاہیے، یہ صرف ملتان جلسے کو سبوتاژ کرنے کے لیے بہانہ ہے۔

عطا تارڑ کا کہنا تھا کہ ملتان میں پی ڈی ایم کا جلسہ 30 نومبر کو ہونے جا رہا ہے، عبدالغفار ڈوگر بےگناہ ہیں، فوری رہا کیا جائے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں