The news is by your side.

Advertisement

نجی میڈیکل سینٹرمیں آکسیجن نہ ملنے سے 4 نومولود جان کی بازی ہار گئے

جیکب آباد : نجی میڈیکل سینٹرمیں آکسیجن نہ ملنے سے چارنومولودجاں بحق ہوگئے ، ڈپٹی کمشنر جیکب آباد نے واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے نجی اسپتال کو سیل کر دیا اور انکوائری کا حکم دے دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق جیکب آباد کےعلاقے ٹھل کےنجی میڈیکل سینٹرمیں آکسیجن نہ ملنے سے چارنومولودجاں بحق ہوگئے، بچےانتہائی نگہداشت کےوارڈمیں داخل تھے۔

اسپتال ذرائع کا کہنا ہے کہ میڈیکل سینٹر کا انچارج ڈاکٹر رات گئے گھرچلا گیا، عملے کی غفلت کے باعث بچوں کو بروقت آکسیجن نہ ملی اور وہ جاں بحق ہوگئے، بچوں کی موت کی تصدیق ہونے پر ڈاکٹر فرار ہوگیا۔

بچوں کی ہلاکت پر لواحقین نے نجی اسپتال کے خلاف احتجاج کیا اور الزام عائد کیا کہ بچے اسپتال انتظامیہ کی غفلت اور لاپروائی کے باعث انتقال کر گئے ہیں جبکہ مطالبہ کیا کہ اسپتال انتظامیہ کے خلاف قانونی کارروائی کی جائے۔

اے آر وائی نیوز کی خبر پر ڈپٹی کمشنر جیکب آباد نےنوٹس لیتے ہوئے نجی اسپتال کو سیل کر دیا اور اسسٹنٹ کمشنر کو انکوائری افسر مقرر کرتے ہوئے دو روز میں واقعے کی رپورٹ طلب کر لی ہے۔

ڈپٹی کمشنر نے کہا کہ ہدایات جاری کردی گئی ہیں بچوں کے ورثاءایف آئی آر درج کروانا چاہیں تو کروا سکتے ہیں۔

یاد رہے دو روز قبل لاہور کے علاقے فرید کالونی میں واقع قبرستان سے تین نومولود بچوں کی لاشیں برآمد ہوئیں تھیں ، جس کے بعد اہل علاقہ نے پولیس کو شکایت درج کرائی تھی۔

بعد ازاں پولیس نے ابتدائی معلومات حاصل کرنے کے بعد گورکن رفاقت کو مزید تفتیش کے لیے حراست میں لیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں