فرانس: صدارتی انتخابات‘پہلےمرحلےمیں امینیول اورلاپین کامیاب -
The news is by your side.

Advertisement

فرانس: صدارتی انتخابات‘پہلےمرحلےمیں امینیول اورلاپین کامیاب

پیرس: فرانس میں صدارتی انتخابات کےپہلے مرحلےکے ابتدائی اندازے کے مطابق خاتون امیدوار مارین لے پین اورامینیول ماکروں کامیاب ہوگئےہیں۔

فرانسیسی میڈیا کےمطابق ملک میں ہونے والے صدارتی انتخابات میں امینیول ماکروں نے23.7 فیصد ووٹ حاصل کیے جبکہ ماری لا پین 21.7 فیصد ووٹ حاصل کیے ہیں۔

اگر کوئی بھی امیدوار 50 فیصد سے زیادہ ووٹ نہیں حاصل کرسکا تو یہ انتخاب دوسرے مرحلے میں جاتے ہیں جس میں پہلے راؤنڈ میں پہلے اور دوسرے نمبر پر آنے والے دو امیدواروں کے درمیان مقابلہ ہوتا ہے۔

فرانس کے حتمی صدارتی انتخابات آئندہ ماہ 7 مئی کو ہوں گے، تاہم دوسرے مرحلے میں وہی امیدوار حصہ لینے کے اہل ہوں گے جو پہلے مرحلے میں کامیاب ہوں گے۔

صدارتی انتخابات کے پہلے مرحلے میں مختلف جماعتوں اور نظریات کے 11 امیدوار حصہ لے رہیں، جن میں سے صرف 3 امیدواروں کے درمیان کانٹے کے مقابلے کا امکان کیا جا رہا تھا۔

صدارتی انتخابات کے پہلے مرحلے کے تین بڑے امیدواروں میں سابق وزیر اعظم فرانسواں فیوں، 40 سالہ بینکار اور حالیہ صدر کےمشیرامینیول ماکروں اور نیشنل فرنٹ کی 48 سالہ مارین لاپین ہیں۔

خیال رہے کہ سخت سیکیورٹی میں ہونے والے فرانسیسی صدارتی انتخابات نہ صرف یورپی یونین بلکہ امریکا اور برطانیہ کے لیے بھی نہایت اہم سمجھے جا رہے ہیں۔


فرانس: صدارتی انتخابات میں ووٹنگ کا آغاز


یاد رہےکہ گزشتہ روز پہلے مرحلے کی پولنگ صبح 8 بجے شروع ہوئی، جو شام 8 بجے تک جاری رہی، پولنگ کے لیے ملک بھر میں 70 ہزار سے زائد پولنگ اسٹیشنز بنائے گئے، جبکہ 50 ہزار سیکیورٹی اہلکاراور 7ہزار فوجی تعینات کیے گئے۔

واضح رہےکہ فرانس میں ووٹرز کی تعداد 47 ملین ہے، جبکہ میڈیا رپورٹس کے مطابق پولنگ کا ٹرن آؤٹ 80 فیصد رہا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں