فرانس کے مسلمانوں پر حلال ٹیکس نافذ کرنے پر غور france halal tax
The news is by your side.

Advertisement

فرانس میں مسلمانوں پر حلال ٹیکس نافذ کرنے پر غور

پیرس: فرانس میں حکومت نے مساجد و مدارس کو بیرونی ٹیکس کی روک تھام کے لیے حلال ٹیکس کے نفاذ پر غور شروع کردیا ہے۔

غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق یہ ٹیکس مسلمانوں کی تنظیم خود اکٹھا کرے گی، اور رقم مساجد، مسلمانوں کے دیگر امور پر خرچ کی جائے گی۔

فرانس میں اکثر مساجد بیرونی فنڈنگ سے چلتی ہیں، جس پر فرانسیسی تھنک ٹینک نے حلال ٹیکس کے نفاذ کی سفارش کی ہے، جس کے تحت حلال مصنوعات، حج اور عطیات پر ٹیکس عائد کیا جائے گا۔

فرانسیسی صدر میکرون کے زیر غور رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ بیرونی فنڈنگ کی روک تھام کے لیے مسلمانوں پر نیا ٹیکس نافذ کیا جائے، جو مسلمانوں کی تنظیم خود اکٹھے کرے گی اور یہ رقم مسلمانوں کے مذہبی امور پر خرچ ہوگی۔

فرانسیسی قوانین کے مطابق مذہبی مقامات کے لیے سرکاری فنڈنگ استعمال نہیں کی جاسکتی ہیں، فرنچ مسلم کونسل ختم کرکے مسلم ایسوسی ایشن فار اسلام ان فرانس کے نام سے نئی تنظیم کے قیام کی بھی سفارش کی گئی ہے۔

فرانسیسی میڈیا کے مطابق فرانس میں تشویش پائی جاتی ہے کہ بیرونی ممالک فنڈنگ سے مسجدیں چلائی جاتی ہیں جن کی وجہ سے ملک میں انتہاپسندی پھیل رہی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں