The news is by your side.

بھارت نہیں چاہتا مقبوضہ کشمیر کے حالات دنیا کے سامنے آئیں: فرانسیسی فلم ساز

اسلام آباد: فرانسیسی فلم ساز پال کومٹی نے کہا ہے کہ بھارت نہیں چاہتا مقبوضہ کشمیر کے حالات دنیا کے سامنے آئیں، بھارت نے کشمیریوں کا جینا مشکل کر دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق مقبوضہ کشمیر پر ڈاکومینٹری بنانے والے فرانسیسی صحافی پال کومٹی نے اے آر وائی نیوز سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ بھارت نے کشمیریوں کا جینا مشکل کر دیا ہے، بھارت نہیں چاہتا مقبوضہ کشمیر کے حالات دنیا کے سامنے آئیں۔

فرانسیسی فلم میکر نے کہا کہ انھوں نے متعد بار صحافی کی حیثیت سے مقبوضہ کشمیر جانے کی اجازت مانگی تھی لیکن بھارت نے مقبوضہ کشمیر جانے کی اجازت نہیں دی۔

پال کومٹی کا کہنا تھا کہ انھوں نے بھارت سے فلم بنانے کے لیے ویزا جاری کرنے کی درخواست کی، بھارت کی جانب سے فلم کی اجازت سے بھی انکار کیا گیا، اس کے بعد مقبوضہ وادی کی صورتِ حال جاننے کے لیے عام آدمی کی حیثیت سے گیا۔

مزید تفصیل: مقبوضہ کشمیر، فرانسیسی صحافی کی دستاویزی فلم میں بھارت کامکروہ چہرہ بے نقاب

ان کا کہنا تھا کہ بھارتی فورسز نے انھیں گرفتار کیا، ان سے کیمرے اور دیگر سامان چھین لیا گیا، انھوں نے اقوام عالم سے جنت نظیر وادی میں بھارتی مظالم کا نوٹس لینے کا مطالبہ کر دیا۔

پال کومٹی نے کہا کہ مقبوضہ وادی میں جگہ جگہ عوام کو مشکلات کا سامنا ہے، وہاں کاروبار کا بڑا ذریعہ سیاحت ہے، جسے بھارت نے ختم کر دیا ہے۔

خیال رہے کہ فرانسیسی فلم میکر نے اپنی دستاویزی فلم وار آن دا روف آف ورلڈ میں مقبوضہ کشمیر میں نہتے کشمیریوں پر بھارت کے وحشیانہ مظالم دنیا کے سامنے پیش کیے ہیں جب کہ آزاد کشمیر کے حالات بھی فرانسیسی ڈاکیومینٹری کا حصہ بنائے گئے ہیں۔

بھارت نے ڈاکومنٹری روکنے کی ہر ممکن کوشش کی، فلم سازی کے دوران فرانسیسی صحافی کو بھارتی فورسز نے حراست میں بھی لیا، پال کومیٹی اپنی ٹیم سمیت 3 ہفتے تک بھارتی فورسز کی حراست میں رہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں